ہوم » نیوز » عالمی منظر

بڑی خبر: طالبان کے چنگل سے ڈیڑھ سال بعد آزاد ہوئے تین ہندستانی انجینئر: رپورٹ

وہیں امریکہ نے بھی اس رہائی کے بدلے 11 طالبانی لیڈران کو رہا کیا ہے جس میں دو اہم طالبانی لیڈر شیخ عبدالرحمٰن اور مولوی عبد الراشد شامل ہیں۔

  • Share this:
بڑی خبر: طالبان کے چنگل سے ڈیڑھ سال بعد آزاد ہوئے تین ہندستانی انجینئر: رپورٹ
وہیں امریکہ نے بھی اس رہائی کے بدلے 11 طالبانی لیڈران کو رہا کیا ہے جس میں دو اہم طالبانی لیڈر شیخ عبدالرحمٰن اور مولوی عبد الراشد شامل ہیں۔

اسلام آباد:  افغانستان میں یرغمال بنائے گئے 3 تین ہندستانی انجینئروں کو طالبان نے امریکہ سے بات چیت کے بعد رہا کر دیا ہے۔ اسلام آباد میں امریکی نمائند ہ زلمے خلیل زاد اور طالبان کے درمیان ہوئے مذاکرات کے بعد خوشگوار نتیجہ سامنے آیا ہے۔ وہیں امریکہ نے بھی اس رہائی کے بدلے 11 طالبانی لیڈران کو رہا کیا ہے جس میں دو اہم طالبانی لیڈر شیخ عبدالرحمٰن اور مولوی عبد الراشد شامل ہیں۔

غور طلب ہے کہ افغانستان کے ایک پاور پروجیکٹ میں کام کرنے والے 3 ہندستانیوں کو طالبان کے ذریعے 2018 میں اغوا کر لیا گیا تھا۔ امریکی فوج نے 11 طالبانی قیدیوں کو بگرام ایئر بیس سے رہا کیا ہے۔ رہا کئے گئے قیدیوں میں دونوں اہم طالبانی لیڈر شامل ہیں جنہوں نے 2001 میں طالبان حکومت کے دوران کناور اور نمروج ریاست کے گورنر کے طور پر کام کیا ہے۔

وہیں ایکسپریس ٹریبیون نے طالبانی ذرائع کے حوالے سے خبر دی ہے کہ یرغمالیوں کا یہ تبادلہ اتوار کو کیا گیا  لیکن اس کو کس جگہ انجام دیا گیا اس کی اطلاع انہوں نے نہیں دی۔

اخبار نے آر ایف ای/ آر ایل کی رپورٹ کے حوالے سے بتایا کہ طالبان کے ممبران نے نام اجاگر نہ کرنے کی شرط پر یہ جانکاری دی اور معاملے کو نازک بتایا۔

طالبان کے ممبران نے تصویر اور فوٹیج مہیا کرائی جس میں انہوں نے دعویٰ کیا کہ رہا کئے گئے ممبروں کا استقبال کیا گیا۔ افغان یا ہندستانی افسران نے اس وقت اس پر کوئی تبصرہ نہیں کیا ہے۔ قابل غور ہے کہ افغانستان کے شمالی صوبے بغلان میں بجلی گھر میں کام کرنے والے ہندوستانی انجینئروں کو مئی 2018 میں اغوا کرلیا گیا تھا۔ کسی بھی گروپ نے اس کے اغوا کی ذمہ داری نہیں لی تھی۔
First published: Oct 08, 2019 08:59 AM IST