உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    UK PM Race:وزارت عظمیٰ کی دوڑ میں رشی سنک کی ایک اور چھلانگ، دورے راونڈ میں بھی رہے اول نمبر

    UK PM Race: دوسرے مرحلے کی ووٹنگ میں بھی سب سے آگے رہے رشی سنک۔

    UK PM Race: دوسرے مرحلے کی ووٹنگ میں بھی سب سے آگے رہے رشی سنک۔

    UK PM Race: ہندوستانی نژاد رشی سنک برطانیہ کے اگلے وزیر اعظم ہو سکتے ہیں۔ انہوں نے بورس جانسن کی جگہ کنزرویٹو پارٹی کے رہنما اور برطانیہ کے وزیر اعظم بننے کی دوڑ میں اپنی گرفت مضبوط کر لی ہے۔

    • Share this:
      UK PM Race:ہندوستانی نژاد رشی سنک برطانیہ کے اگلے وزیر اعظم ہو سکتے ہیں۔ انہوں نے بورس جانسن کی جگہ کنزرویٹو پارٹی کے رہنما اور برطانیہ کے وزیر اعظم بننے کی دوڑ میں اپنی گرفت مضبوط کر لی ہے۔ سنک دوسرے مرحلے کی پولنگ میں 101 ووٹوں کے ساتھ سرفہرست رہے۔ وزیر اعظم کے عہدے کی دوڑ میں ان کے ساتھ چار اور امیدوار باقی ہیں۔ ووٹنگ کے دوسرے مرحلے میں ہندوستانی نژاد اٹارنی جنرل سویلا برورمین کو سب سے کم 27 ووٹ ملے۔ اس کے ساتھ ہی وہ اس دوڑ سے باہر ہو گئی ہیں۔

      ارکان پارلیمنٹ کی جانب سے دوسرے مرحلے کی ووٹنگ کے بعد آگے بڑھتی اس ریس میں سنک کے علاوہ وزیر تجارت پینی مورڈوینٹ کو 83 ووٹ، وزیر خارجہ لز ٹرس کو 64 ووٹ، سابق وزیر کیمی باڈینوک کو49 ووٹ اور کنزرویٹو پارٹی کے رہنما ٹام ٹوگینڈہاٹ کو 32 ووٹ کے ساتھ اس ریس میں برقرار ہیں۔ کنزرویٹو پارٹی کے ارکان کے درمیان ووٹنگ کے اگلے پانچ مراحل کی تکمیل کے بعد، اگلے جمعرات تک صرف دو رہنما ہی اس دوڑ میں باقی رہ جائیں گے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      UK PM Race:برٹین کے پی ایم کی دوڑ میں ہندوستانی نژاد رشی سونک کی بڑی کامیابی

      یہ بھی پڑھیں:
      Sri Lankaکےکارگزار صدر نے اسپیکر سے کہا-ایساPMنامزد کریں جو حکومت اور اپوزیشن کو ہوقبول

      پہلے راونڈ میں بھی ٹاپ پر رہے تھے سنک
      سابق وزیر خزانہ سنک (Rishi Sunak) کو پہلے مرحلے کی ووٹنگ میں سب سے زیادہ 88 ووٹ ملے تھے۔ وزیر تجارت پینی مورڈنٹ کو 67 اور وزیر خارجہ لز ٹرس کو 50 ووٹ حاصل ہوئے تھے۔ ساتھ ہی سابق وزیر کیمی بیڈینوچ کو 40 اور ٹام ٹوگینڈہاٹ کو 37 ووٹ ملے تھے۔ اس کے ساتھ ہی اٹارنی جنرل سویلا بریورمین کے کھاتے میں 32 ووٹ آئے۔ تاہم، سویلا تیسرے راؤنڈ میں باہر ہو گئی ہیں۔ رشی سنک نے ووٹنگ سے قبل بی بی سی کو بتایا، ’’میرے خیال میں ہماری پہلی اقتصادی ترجیح مہنگائی سے نمٹنا ہے۔ مہنگائی دشمن ہے اور سب کو غریب بناتی ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: