உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بغداد میں امریکی سفارتخانے پر داغے گئے راکٹ، حملے میں ایک بچہ اور خاتون زخمی

    عراق میں امریکی فوجیوں پر بڑھتے جارہے ہیں حملے۔

    عراق میں امریکی فوجیوں پر بڑھتے جارہے ہیں حملے۔

    عراقی فوجی عہدیداروں نے نیوز ایجنسی رائٹر کو بتایا کہ دیر رات ہوئے حملے میں امریکی سفارتخانے کی جانب سے دو سے تین کاتیوشا راکٹ (Katyusha rockets) داغے گئے تھے اور ان میں سے کم سے کم دو کو سفارتخانے کی راکٹ ڈیفنس سسٹم کی جانب سے مار گرایا گیا۔

    • Share this:
      بغداد: عراق کے دارالحکومت بغداد میں واقع امریکی سفارتخانے کو نشانہ بنا کر راکٹ حملہ کیا گیا ہے۔ عراقی فوج نے ایک بیان میں کہا کہ بغداد میں امریکی سفارتخانے پر داغے گئے راکٹ حملے میں ایک بچہ اور ایک خاتون زخمی ہوگئے۔ یہ ایک منفرد واقعہ ہے جہاں اس طرح کے واقعے میں عراقیوں کو چوٹ لگی ہے۔‘ بیان میں حملے کی تفصیل نہیں بتائی گئی ہے لیکن کہا گیا ہے کہ ایک اسکول میں ایک راکٹ گرا تھا۔


      یہ نہیں بتایا گیا کہ کیا یہ وہ راکٹ تھا جس نے خاتون اور بچے کو زخمی کیا۔ حملہ جمعرات کی دیر رات کیا گیا۔ عراقی فوجی عہدیداروں نے نیوز ایجنسی رائٹر کو بتایا کہ دیر رات ہوئے حملے میں امریکی سفارتخانے کی جانب سے دو سے تین کاتیوشا راکٹ (Katyusha rockets) داغے گئے تھے اور ان میں سے کم سے کم دو کو سفارتخانے کی راکٹ ڈیفنس سسٹم کی جانب سے مار گرایا گیا۔

      سفارتخانے کو نشانہ بنا کر کیے گئے حملے
      اس مہینے سفارتخانے کو نشانہ بنا کر کئی حملے کیے گئے ہیں، جن میں سے کچھ کے لئے امریکہ نے ایران و اتحادی ملیشیاوں پر الزام لگایا ہے۔ ان حملوں میں امریکی فوجی اور سفارتخانے کے ملازمین کی میزبانی کرنے والے ٹھکانوں یا اداروں کو ٹارگیٹ کیا گیا تھا، لیکن کوئی امریکی نقصان نیہں ہواہے۔ بتادیں کہ اس سے پہلے 6 جنوری کو عراق اور سیریا میں امریکی فوجیوں کو نشانہ بنا کر سلسلہ وار حملے کیے گئے تھے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: