உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Russia Ukraine War:ایٹمی جنگ کی دھمکی کے بعد روس نے روکی پولینڈ کی گیس سپلائی

    روس کے صدر ولادیمیر پوتن۔

    روس کے صدر ولادیمیر پوتن۔

    Russia Ukraine War:برطانیہ کی وزارت دفاع نے کہا ہے کہ یوکرین کے شہر کریمنا پر روسی افواج نے قبضہ کر لیا ہے۔ برطانوی وزارت نے منگل کو ایک ٹویٹ کے ذریعے یہ اطلاع دی۔ ٹویٹ میں کہا گیا، 'کریمینا کے پکڑے جانے کی خبر ہے اور ایزیم میں بڑے پیمانے پر لڑائی جاری ہے۔

    • Share this:
      Russia Ukraine War:روس نے یوکرین کے ساتھ جنگ ​​کے درمیان ایٹمی جنگ کا انتباہ دیا ہے۔ اس کے ساتھ روس نے پولینڈ کو گیس کی سپلائی بھی روک دی ہے۔ روس کے وزیر خارجہ سرگئی لاوروف نے دعویٰ کیا ہے کہ یوکرین تیسری عالمی جنگ کو ہوا دے رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایسی صورتحال میں ایٹمی جنگ کے خطرے کو کم نہیں سمجھا جانا چاہئے۔ سرگئی نے الزام لگایا کہ یوکرین کو اسلحہ فراہم کرنے والے مغربی ممالک اور نیٹو روس کے خلاف پراکسی جنگ چھیڑ رہے ہیں۔ یہاں یوکرین پر روس کے حملے کو دو ماہ مکمل ہو گئے۔ روسی فوج اب مشرقی یوکرین کو نشانہ بنا رہی ہے۔ اس علاقے میں فضائی حملوں کے ساتھ ساتھ میزائل بھی داغے جا رہے ہیں۔

      نجی نشریاتی اداروں پول سیٹ نیوز اور Onet.pl ویب سائٹ نے ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ یمل معاہدے کے تحت پولینڈ کو روسی گیس فراہم کی جا رہی تھی جس پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ PGNIG SA، کمپنی جس نے Gazprom سے طویل مدتی معاہدے کے تحت گیس خریدی، نے اس خبر پر تبصرہ کرنے سے انکار کردیا۔ یہ معاہدہ اس سال کے آخر میں ختم ہو رہا ہے۔ خبر رساں ادارے اے پی کے مطابق روسی وزارت خارجہ کی ویب سائٹ کے مطابق سرگئی نے ایک انٹرویو میں کہا کہ نیٹو فوج ہتھیار فراہم کرکے آگ میں ایندھن ڈال رہی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      روس نے آخرکار بتائی WAR کی وجہ، کہا-جنوبی یوکرین پرقبضہ کرنا ہے اس کا ہدف

      انہوں نے کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ مغرب یوکرین کی جنگ جاری رکھنا چاہتا ہے۔ سرگئی نے یوکرین کے رہنماؤں پر الزام لگایا کہ وہ نیٹو کو جنگ میں شامل ہونے کے لیے کہہ کر روس کو اکسا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نیٹو مؤثر طریقے سے روس کے ساتھ جنگ ​​میں مصروف ہے اور پردے کے پیچھے سے ہتھیار فراہم کر رہا ہے۔ سب کہہ رہے ہیں کہ ہم کسی بھی حالت میں تیسری عالمی جنگ کی اجازت نہیں دے سکتے۔ سرگئی کے بیان کے جواب میں یوکرین کے وزیر خارجہ دمتری کولیبا نے کہا کہ "روس نے ہمارے ملک کی حمایت کرنے والی دنیا کو ڈرانے کی آخری امید کھو دی ہے۔" اسی لیے وہ تیسری عالمی جنگ کے خطرے کی بات کر رہا ہے۔ اس کا مطلب ہے کہ روس کو یوکرین میں شکست کا احساس ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      فوج پرخرچ کرنے کے معاملے میںINDIAکاکون ساہے مقام،اسٹاک ہوم پیس ریسرچ انسٹیٹیوٹ کی رپورٹ

      کریمننا پر روس کا قبضہ
      برطانیہ کی وزارت دفاع نے کہا ہے کہ یوکرین کے شہر کریمنا پر روسی افواج نے قبضہ کر لیا ہے۔ برطانوی وزارت نے منگل کو ایک ٹویٹ کے ذریعے یہ اطلاع دی۔ ٹویٹ میں کہا گیا، 'کریمینا کے پکڑے جانے کی خبر ہے اور ایزیم میں بڑے پیمانے پر لڑائی جاری ہے۔ جبکہ روسی افواج مشرقی یوکرین میں سلوویانسک اور کراماتورسک کی طرف پیش قدمی کر رہی ہیں۔ کریمنا یوکرین کے دارالحکومت کیف سے تقریباً 575 کلومیٹر دور ہے۔ یہاں روسی وزارت دفاع نے دعویٰ کیا ہے کہ 18 ممالک کے 76 جہازوں کو یوکرین کی سات بندرگاہوں پر روکا گیا ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: