உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Russia Ukraine War:یوکرین پر روس کے حملے سے سہم گیا یوروپ،جرمنی نے اٹھایا بڑا قدم

    یوکرین جنگ کے پیش نظر جرمنی نے خود کے لئے اٹھایا بڑا قدم۔

    یوکرین جنگ کے پیش نظر جرمنی نے خود کے لئے اٹھایا بڑا قدم۔

    Russia Ukraine War: دنیا کی چوتھی بڑی معیشت جرمنی کے چانسلر نے فروری میں فوجی توسیع پر 100 بلین یورو خرچ کرنے کا اعلان کیا تھا۔ اس کے ساتھ جی ڈی پی (مجموعی گھریلو پیداوار) کا دو فیصد سالانہ سیکورٹی پر خرچ کرنے کا اعلان کیا گیا۔

    • Share this:
      برلن:Russia Ukraine War:یورپی ممالک روس کے بدلتے رویے اور اس کے جارحانہ تیور پر حیران ہیں۔ یوکرین کی جنگ نے جرمنی کو بھی متاثر کیا ہے۔ جرمنی کی مخلوط حکومت اور اپوزیشن کی اہم جماعتوں نے ملک کے دفاعی بجٹ میں اضافے پر اتفاق کیا ہے۔ جرمن چانسلر اولاف شولز نے یوکرین پر روسی حملے کے بعد ملکی سلامتی کی صلاحیت کو بڑھانے کا اعلان کیا۔

      دفاعی سیکٹر میں آتم نربھر بننے کی کوشش
      دوسری عالمی جنگ کے بعد یہ پہلا موقع ہوگا جب جرمنی ہتھیاروں پر بڑا خرچ کرکے سیکورٹی کے معاملے میں آتم نربھر بننے کی کوشش کرے گا۔ ابھی اس کی سیکورٹی کی اہم ذمہ داری امریکہ سنبھال رہا ہے۔

      فوجی توسیع پر 100ارب یورو خرچ کرنے کا اعلان
      دنیا کی چوتھی بڑی معیشت جرمنی کے چانسلر نے فروری میں فوجی توسیع پر 100 بلین یورو خرچ کرنے کا اعلان کیا تھا۔ اس کے ساتھ جی ڈی پی (مجموعی گھریلو پیداوار) کا دو فیصد سالانہ سیکورٹی پر خرچ کرنے کا اعلان کیا گیا۔ چار ٹریلین ڈالر کی معیشت والے ملک میں یہ بہت بڑی رقم ہوگی۔

      آئینی صورتحال میں تبدیلی کی ضرورت
      امریکا ایک عرصے سے نیٹو کے رکن ممالک پر جی ڈی پی کا دو فیصد سیکیورٹی پر خرچ کرنے کے لیے دباؤ ڈال رہا ہے۔ لیکن یوکرین کی جنگ نے یورپی ممالک کو اس بارے میں فیصلہ کرنے پر مجبور کر دیا ہے۔ جرمنی میں دفاعی اخراجات میں اضافے کے لیے آئینی نظام میں تبدیلی کی ضرورت ہے۔ اس سے متعلق قرارداد کو پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں میں دو تہائی اکثریت سے پاس کرنا ہوگا۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Russia Ukraine Crisis:ترکی کے صدر ایردوان نے پوتن کے ساتھ ٹیلیفون پر کی بات

      یہ بھی پڑھیں:
      Pakistan Economic Crisis:گرتی معیشت سے نبردآزما پاکستان کو اب چین سے امیدیں

      دفاعی بجٹ کو بڑھانے کا راستہ ہوگیا آسان
      اب اس معاملے پر اہم اپوزیشن جماعت کے اکٹھے ہونے سے حکومت کے لیے دفاعی بجٹ میں اضافے کا راستہ آسان ہو گیا ہے۔ چانسلر شلز نے تعاون پر اپوزیشن کا شکریہ ادا کیا۔ کہا گیا ہے کہ سیکیورٹی نظام کو مضبوط بنا کر ہم کسی بھی بیرونی حملے سے خود نمٹ سکیں گے۔ اس سے جرمنی اور پورے یورپ کا سکیورٹی نظام مضبوط ہو گا۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: