உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Russia Ukraine War:یوکرین کے صدر کے گھر کے باہر گرا راکٹ، زیلنسکی نے کہا- خطا ہوگیا نشانہ

    یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی۔

    یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی۔

    ایک طرف جہاں راکٹ یوکرین کی صدارتی رہائش گاہ کے باہر گرا ہے وہیں روس کی جانب سے یہ دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی ملک چھوڑ چکے ہیں۔ روس کے سرکاری میڈیا ہاؤس اسپوتنک نے یہ دعویٰ کیا ہے۔

    • Share this:
      کیف:یوکرین پر روس کا حملہ تیزی سے جاری ہے۔ روسی افواج نے یوکرین کے فوجی اڈوں کو تباہ کر دیا ہے اور جو کچھ باقی ہیں ان پر مسلسل بمباری کی جا رہی ہے۔ لیکن یوکرین بار بار یہ دعویٰ کر رہا ہے کہ روس ان کے صدر ولادیمیر زیلنسکی کو قتل کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔ اب یوکرین کی صدارتی رہائش گاہ پر گرائے گئے راکٹ کا ایک ٹکڑا پایا گیا ہے۔ جسے یوکرین صدر پر حملہ قرار دے رہا ہے۔

      کئی مرتبہ قتل کی کوشش کا دعویٰ
      ان کی رہائش گاہ کے باہر گرنے والے اس راکٹ پر خود صدر ولادیمیر زیلینسکی نے تبصرہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ، اس کا ہدف خطا ہوگیا ... یعنی ایک بار پھر زیلنسکی نے بتایا ہے کہ انہیں مارنے کی کوشش کی گئی ہے۔ اس سے قبل بھی ایک رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ زیلنسکی کو تین مرتبہ مارنے کی کوشش کی گئی۔ لیکن ہر بار وہ کسی نہ کسی طرح بچ گئے۔


      یہ بھی پڑھیں:
      Russia Ukraine War:امریکہ کی پوتن کوUNSCمیں وارننگ-نیوکلیئرپلانٹ کو جنگ کاحصہ نہ بنائے روس

      یہ بھی پڑھیں:
      UN میں روس پر ہندوستان کے موقف کو ملی فرانس کی حمایت، کہا-معنی رکھتی ہے ہندوستان کی آواز

      روس کا دعویٰ زیلنیسکی نے چھوڑدیا ملک
      ایک طرف جہاں راکٹ یوکرین کی صدارتی رہائش گاہ کے باہر گرا ہے وہیں روس کی جانب سے یہ دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی ملک چھوڑ چکے ہیں۔ روس کے سرکاری میڈیا ہاؤس اسپوتنک نے یہ دعویٰ کیا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ یوکرین کے صدر نے پولینڈ میں پناہ لے رکھی ہے۔ تاہم یوکرین کی جانب سے اس دعوے کو مسترد کر دیا گیا ہے۔ یوکرین نے کہا ہے کہ زیلنسکی نے ملک نہیں چھوڑا ہے اور وہ اب بھی یوکرین میں ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: