உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Russia-Ukraine War:یوکرین پر حملے کو لے کر امریکہ نے پوتن کی بیٹیوں اور روسی بینکوں پر لگائی پابندی

    پوتن کے بیٹیوں پر امریکہ نے لگائی پابندی۔

    پوتن کے بیٹیوں پر امریکہ نے لگائی پابندی۔

    معلومات کے مطابق روسی صدر پوتن کی سابق اہلیہ لیوڈمیلا کی دو بیٹیاں ماریا وورونٹسوا اور کیترینا تیخونووا ہیں۔ ماریہ کا عرفی نام ماشا ہے اور کترینہ کا عرفی نام کاتیا ہے۔ پیوٹن 1996 میں اپنے خاندان کے ساتھ ماسکو منتقل ہوئے۔

    • Share this:
      واشنگٹن: Russia-Ukraine War:روس اور یوکرین کے درمیان گزشتہ 42 دنوں سے جنگ جاری ہے۔ روسی فوجی اب تک یوکرین کے کئی شہروں کو مکمل طور پر تباہ کر چکے ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ یوکرین کے شہر بوچا میں ہونے والے قتل عام پر پوری دنیا میں روس کو تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ ادھر امریکا نے روسی صدر ولادیمیر پوتن کی بیٹیوں اور روس کے اعلیٰ بینکوں کے خلاف پابندیاں عائد کر دی ہیں۔

      بدھ کو امریکہ کی جانب سے اعلان کردہ پابندیوں کے نئے پیکیج کا مقصد روسی بینکوں اور اس کی اعلیٰ شخصیات کو نشانہ بنانا ہے۔ اس کے علاوہ کسی بھی امریکی شہری پر روس میں سرمایہ کاری کرنے پر بھی پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ یہ نئی پابندیاں بوچا میں ہونے والے قتل عام سے متعلق ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Ukraine-Russia War: روس کی سرحد میں پہلی مرتبہ داخل ہوا یوکرین، تیل ڈپو پر کیا فضائی حملہ

      وزیر خارجہ کی بیوی اور بیٹی پر بھی پابندی
      امریکی صدر جو بائیڈن نے روسی صدر ولادیمیر پوتن کی دونوں بیٹیوں ماریا اور کیترینا سمیت روسی اولیگارچز پر مکمل پابندیاں عائد کرنے کا اعلان کیا ہے۔ پابندیوں کا سامنا کرنے والے دیگر افراد میں روسی وزیر خارجہ سرگئی لاوروف کی اہلیہ اور بیٹی بھی شامل ہیں۔ اس کے علاوہ روس کی سلامتی کونسل کے ارکان بھی شامل ہیں جن میں روسی وزیر اعظم میخائل میشوستین اور سابق صدر دمتری میدویدیف بھی شامل ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Ukraine Russia War:جنگ میں5ویں صحافی کی موت،لاپتہ میکس لیوین کیو کے پاس مردہ پائے گئے

      سابقہ بیوی لیوڈمیلا اور دو بیٹیاں بھی ہیں شامل
      معلومات کے مطابق روسی صدر پوتن کی سابق اہلیہ لیوڈمیلا کی دو بیٹیاں ماریا وورونٹسوا اور کیترینا تیخونووا ہیں۔ ماریہ کا عرفی نام ماشا ہے اور کترینہ کا عرفی نام کاتیا ہے۔ پیوٹن 1996 میں اپنے خاندان کے ساتھ ماسکو منتقل ہوئے، جہاں ان کی دونوں بیٹیوں نے جرمن زبان کے اسکول میں تعلیم حاصل کی، جب کہ ان کی بیٹیوں کو مبینہ طور پر 1999 میں پوتن کے قائم مقام صدر بننے کے بعد اسکول سے نکال دیا گیا۔ اور پھر انھوں نے گھر سے تعلیم حاصل کی تھی۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: