உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Big News: روس کے صدر پوتن کو 'سائیکوپیتھ' کہنے والی ماڈل کا قتل، سوٹ کیس میں ملی لاش!

    Big News: روس کے صدر پوتن کو 'سائیکوپیتھ' کہنے والی ماڈل کا قتل، سوٹ کیس میں ملی لاش! (Credit- East2west/Social Media)

    Big News: روس کے صدر پوتن کو 'سائیکوپیتھ' کہنے والی ماڈل کا قتل، سوٹ کیس میں ملی لاش! (Credit- East2west/Social Media)

    گریٹا ویڈلر پہلی بار اس وقت سرخیوں میں آئی تھیں ، جب انہوں نے کھلے عام روس کے صدر ولادیمیر پوتن کو نفسیاتی مریض کہا تھا ۔ تاہم ان کی موت (Model Called Putin Psychopath died) کا پوتن سے کوئی لینا دینا نہیں ہے ۔

    • Share this:
      کبھی کبھی زندگی میں ایک غلط فیصلہ آپ کی زندگی پر بھاری پڑجاتا ہے۔ ایسا ہی ایک غلط فیصلہ روسی ماڈل گریٹا ویڈلر  (Model Gretta Vedler)  نے کیا تھا ، جس کا خمیازہ انہیں اپنی جان دے کر بھگتنا پڑا۔ گریٹا ویڈلر پہلی بار اس وقت سرخیوں میں آئی تھیں ، جب انہوں نے کھلے عام روس کے صدر ولادیمیر پوتن کو نفسیاتی مریض کہا تھا ۔ تاہم ان کی موت  (Model Called Putin Psychopath died)  کا پوتن سے کوئی لینا دینا نہیں ہے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے : ولادیمیر پوتن نے توڑ دیا حسیناوں کا دل ، ایک فیصلے نے 'برباد کردی زندگی!'


      گریٹا ویڈلر کا پوتن کو سائیکو پیتھ کہنا ، انہیں صرف سرخیاں دلا سکا تھا ، لیکن روسی صدر کا ان کی موت سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ گریٹا کی موت کی وجہ اس کا سابق بوائے فرینڈ ہے ، جس نے کچھ تنازعات کے بعد اپنی گرل فرینڈ کو موت کے گھاٹ اتار دیا ۔

       

      یہ بھی پڑھئے : ڈنر کے دوران روسی صدر ولادیمیر پوتن نے کیا کچھ ایسا، ڈر سے کانپنے لگی تھی یہ ماڈل


      23 سالہ گریٹا کا سابق بوائے فرینڈ اس کا ہم عمر دیمتری کورووین تھا ، جو اپنی گرل فرینڈ کا بے دردی سے قتل کرکے اس کی لاش کو سوٹ کیس میں بھر کر گاڑی کے بوٹ میں رکھ کر گھومتا رہا ۔ اب کورووین نے اپنے جرم کا اعتراف کرتے ہوئے بتایا ہے کہ اس نے گریٹا کو 300 میل کا فاصلہ طے کر کے لیپیٹسک نامی جگہ پہنچایا تھا ، جہاں اس نے گریٹا کی لاش کو سوٹ کیس میں بھر کر کار کے بوٹ میں چھوڑ دیا تھا۔ پیسوں کے تنازع کو لے کر گریٹا کا کورووین نے قتل کیا تھا ، اس کے سیاسی نظریات سے اس کا کوئی تعلق نہیں ہے ۔

      کورووین نے گریٹا کی موت کے بعد اس کے سوشل میڈیا پیج کو مسلسل مینٹین رکھا، تاکہ کسی کو اس کی موت یا گمشدگی کا شبہ نہ ہو۔ یہ اس وقت تک جاری رہا جب تک کہ اس کے یوکرائنی بلاگر دوست میں سے ایک کو شک نہیں ہوا ۔ اس نے روسی دوست کو اس بارے میں آگاہ کیا تو گریٹا کی تلاش شروع ہو گئی۔ بالآخر اس کے بوائے فرینڈ نے قتل کرنے کا اعتراف کر لیا۔ گریٹا نے ایک سال پہلے پوتن کے بارے میں آن لائن لکھا تھا کہ وہ ایک سائیکوپیتھ یا سوشیوپیتھ ہیں۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: