உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سعودی عرب میں خاتون کو نہیں ملی موسیقی کار سے شادی کرنے کی اجازت

    علکامتی تصویر

    علکامتی تصویر

    سعودی عرب میں عدالت نے ایک خاتون کو صرف اس لئے اپنے پسند کے شخص سے شادی کرنے کی اجازت نہیں دی کیونکہ وہ میوزیکل انسٹرومینٹ بجاتا ہے ۔

    • Share this:
      سعودی عرب میں عدالت نے ایک خاتون کو صرف اس لئے اپنے پسند کے شخص سے شادی کرنے کی اجازت نہیں دی کیونکہ وہ میوزیکل انسٹرومینٹ بجاتا ہے اور اس لئے وہ مذہبی طور سے لڑکی کیلئے مناسب نہیں ہے۔ سعودی کے ایک اخبار نے منگل کو اس سلسلے میں خبر دی ہے۔  خواتین کو شادی کرنے کیلئے اپنے مرد سرپرست سے اجازت لینے کی ضرورت ہوتی ہے۔

      سلطنت کے کچھ حصوں میں میوزک بجانے والے لوگوں کو نچلے طبقے کا ماناجاتا ہے۔ اخبار کے مطابق ایک ٹیچر نے قصیم کی رہنے والی 38 سالہ خاتون کا ہاتھ مانگا تھا لیکن گھر والوں نے اس کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ وہ مذہبی طور سے خاتون کیلئے مناسب نہیں ہے۔
      اس پر خاتون نے عدالت سے شادی کی درخواست کی۔ عدالت نے اپنے فیصلے میں کنبہ والوں کا ساتھ دیا اور خاتون کو شادی کی اجازت دینے سے انکار کر دیا۔
      First published: