உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Saudi Arabia: سعودی عرب میں تمام کووڈ۔19پابندیاں ختم، غیرملکوں کیلئےبھی کوئی پابندی نہیں

    العلی نے اشارہ کیا کہ اس وقت سعودی عرب میں کورونا کے تصدیق شدہ کیسز میں 95 فیصد کمی آئی ہے۔

    العلی نے اشارہ کیا کہ اس وقت سعودی عرب میں کورونا کے تصدیق شدہ کیسز میں 95 فیصد کمی آئی ہے۔

    اس سے قبل 5 مارچ 2022 کو سعودی عرب نے مملکت میں زیادہ تر کورونا پابندیاں ہٹا دی ہیں۔ اس میں مسجد الحرام اور مسجد نبوی میں نمازیوں کے درمیان سماجی دوری کو ختم کرنا شامل ہے۔ تاہم نمازیوں کو ماسک پہننے کی ضرورت کو اب بھی برقرار رکھا گیا ہے۔

    • Share this:
      ریاض: مملکت سعودی عرب (Kingdom of Saudi Arabia) کی وزارت صحت نے پیر کے روز مملکت سعودی عرب میں داخل ہونے والوں کے لیے عالمی وبا کورونا وائرس ( COVID-19) سے متعلق تمام پابندیاں اٹھانے کا اعلان کیا ہے۔ وزارت نے کہا ہے کہ ان پابندیوں کو ہٹانے کی وجوہات مثبت کورونا کیسز کی شرح میں 5 فیصد سے کم اور ہدف والے گروپ (12 سال سے اوپر) کے لیے ویکسینیشن کی شرح 99 فیصد ہے۔

      منسوخ شدہ کورونا پابندیاں درج ذیل ہیں:

      کورونا کے خلاف ویکسینیشن کا سرٹیفکیٹ جمع کرانے کی ذمہ داری

      مملکت میں آنے سے پہلے یا آمد پر پی سی آر ٹیسٹ کی منسوخی

      مملکت میں آنے والے مسافروں کے لیے قرنطینہ کی منسوخی

      اب بغیر ٹیکے مسافروں کو مملکت میں داخل ہونے کی اجازت دی گئی ہے۔

      ۔ 5 مارچ 2022 کو سعودی عرب نے مملکت میں زیادہ تر کورونا پابندیاں ہٹا دی ہیں۔ اس میں مسجد الحرام اور مسجد نبوی میں نمازیوں کے درمیان سماجی دوری کو ختم کرنا شامل ہے۔ تاہم نمازیوں کو ماسک پہننے کی ضرورت کو اب بھی برقرار رکھا گیا ہے۔

      مزید پڑھیں: افغانستان کے سابق وزیر خزانہ بن گئے ہیں Uber ڈرائیور، کبھی پیش کیا تھا چھ ارب ڈالر کا بجٹ

      ۔ 6 مارچ 2022 کو وزارت صحت کے ترجمان محمد العبد العالی نے کورونا کی پیشرفت کو ظاہر کرنے کے لیے متواتر پریس کانفرنس کے اختتام کا اعلان کیا۔

      العلی نے اشارہ کیا کہ اس وقت سعودی عرب میں کورونا کے تصدیق شدہ کیسز میں 95 فیصد کمی آئی ہے، جب کہ شدید کیسوں میں 62 فیصد کمی آئی ہے۔

      ۔ 4 مارچ 2020 کو سعودی عرب نے شہریوں اور رہائشیوں کے لیے عمرہ کو عارضی طور پر معطل کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔ کورونا کے پھیلاؤ کے خوف سے حکام نے حجاج کرام کو مدینہ منورہ میں مسجد نبوی میں جانے سے روکنے کا بھی فیصلہ کیا تھا۔

      اکتوبر 2020 میں سعودی عرب نے عالمی وبا کی وجہ سے تقریباً سات ماہ کی معطلی کے بعد دوبارہ عمرہ شروع کیا تھا۔

      مزید پڑھیں: OMG: دماغ کی سرجری کرانے اسپتال پہنچی ماڈل، علاج کے دوران ہی بنانے لگی فحش ویڈیوز

      ۔ 17 اکتوبر 2021 کو کورونا کے کیسوں کے نتیجے میں کمی اور مملکت میں ویکسینیشن میں کافی ترقی کی وجہ سے سعودی عرب کی وزارت داخلہ نے کورونا پابندیوں میں نرمی کی۔

      دسمبر 2021 کو سعودی عرب نے اکتوبر میں منسوخ ہونے کے بعد دو مقدس مساجد میں جسمانی دوری کو دوبارہ متعارف کرایا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: