ہوم » نیوز » عالمی منظر

پاکستان نے سعودی عرب سے لگائی گہار، کشمیر، سی اے اے اور این آرسی پر بلائےمسلم ممالک کی میٹنگ

سعودی عرب کے وزیرخارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے اپنےپاکستانی ہم منصب شاہ محمود قریشی سےجمعرات کو خارجہ دفترمیں ملاقات کی۔ ہندوستان پر اقلیتوں کو نشانہ بنانےکا الزام لگایا۔

  • Share this:
پاکستان نے سعودی عرب سے لگائی گہار، کشمیر، سی اے اے اور این آرسی پر بلائےمسلم ممالک کی میٹنگ
سعودی عرب کے وزیرخارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے اپنےپاکستانی ہم منصب شاہ محمود قریشی سےجمعرات کو خارجہ دفترمیں ملاقات کی۔ ہندوستان پر اقلیتوں کو نشانہ بنانےکا الزام لگایا۔

اسلام آباد: شہریت ترمیمی قانون، این آرسی اورکشمیرکےحالات پرتبادلہ خیال کرنے  کے لئے اسلامی تعاون تنظیم (اوآئی سی) کےاراکین ممالک کے وزرائے خارجہ کی میٹنگ بلانےکا منصوبہ بنا رہا ہے۔ پاکستانی میڈیا کی خبرمیں اس بارے میں بتایا گیا ہے۔ 'ڈان' اخبار نے سفارتی ذرائع کے حوالےسےبتایا کہ سعودی عرب کے وزیرخارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نےاپنے پاکستانی ہم منصب شاہ محمود قریشی سے جمعرات کوخارجہ دفترمیں ملاقات کی۔


پاکستان نے کشمیرمسئلے پر اوآئی سی کے کردار پرتبادلہ خیال کیا


شہزادہ فیصل حال ہی میں مسلم ممالک کےکوالالمپوراجلاس میں حصہ نہیں لینےکے بارے میں اپنےملک کی قیادت کے رخ سےآگاہ کرنےکےلئے ایک دن کے دورے پرپاکستان آئے تھے۔ پاک وزارت خارجہ کےدفترنےایک بیان میں کہا، 'دونوں وزرائے خارجہ نےکشمیر کےمسئلےپراوآئی سی کے رول پرتبادلہ خیال کیا'۔ شاہ محمود قریشنی نے پرنس فیصل کو ہندوستان کے ذریعہ 5 اگست کوآرٹیکل 370 کے بیشترالتزام ختم کئےجانے کے بعد کشمیر میں حالات کے بارے میں بتایا۔


ہندوستان کے اقلیتوں کونشانہ بنانے کا لگایا الزام

پاکستانی وزارت خارجہ کے دفترنےکہا کہ انہوں نےشہریت ترمیمی قانون اوراین آرسی کے متعلق ہندوستانی حکومت کی کارروائی اورہندوستان میں مسلسل اقلیتوں کومبینہ طورپرنشانہ بنائےجانےکا موضوع اٹھایا۔ اوآئی سی مسلم اکثریتی ممالک کی تنظیم ہےاورپاکستان بھی اس کا حصہ ہے۔ عام طورپریہ تنظیم پاکستان کی حمایت کرتی ہےاورکئی بارکشمیرموضوع پر پاکستان کا ساتھ دے چکی ہے۔ اوآئی سی نےایک مختصربیان میں گزشتہ ہفتہ کہا تھا کہ وہ ہندوستان میں مسلم اقلیتوں کومتاثرکرنے والےحالیہ حادثات پرقریبی نظررکھے ہوئےہے۔

عمران خان نے ہندوستان پرلگایا یہ بڑا الزام

شہزادہ فیصل نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی۔ میٹنگ میں وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی، خارجہ سکریٹری سہیل محمود، خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی کےسربراہ لیفٹیننٹ جنرل فیض حامد اوردیگرسینئرافسران موجود تھے۔ عمران خان نے سعودی عرب کے وزیرسےکہا کہ ہندوستان کےذریعہ جنگ بندی کی مبینہ خلاف ورزی سےلائن آف کنٹرول (ایل اوسی پر کشید گی میں اضافہ ہورہا ہے اوریہ علاقائی امن وامان اورسیکورٹی کےلئےخطرہ ہے۔ سعودی عرب کے ہندوستان سےبڑھتےکاروباراورمسلمانوں کےموضوعات پرسخت رخ اختیارکرنےسےاوآئی سی کی ناکامی کی پاکستان میں کوالالمپوراجلاس کوزبردست حمایت ملی۔ یہ اجلاس 21-19 دسمبرکوہوا۔
First published: Dec 29, 2019 05:56 PM IST