ہوم » نیوز » عالمی منظر

سعودی عرب نے جی-20 اجلاس سے پہلے سلجھایا غلط نقشے والا تنازعہ، واپس لیا بینک نوٹ

سعودی حکومت نے 20 ریال کے اس بینک نوٹ کو واپس لے لیا ہے جس پر ہندستان کا غلط نقشہ چھاپا گیا تھا۔ اس نوٹ میں غیر منقسم جموں وکشمیر اور لداخ کو ہندستان سے الگ دکھایا گیا تھا۔ نوٹ پر چھپے نقشے کو لے کر ہندستان نے سخت اعتراض کیا تھا۔

  • Share this:
سعودی عرب نے جی-20 اجلاس سے پہلے سلجھایا غلط نقشے والا تنازعہ، واپس لیا بینک نوٹ
سعودی شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی فائل فوٹو

نئی دہلی۔ جی۔ 20 اجلاس سے ٹھیک پہلے سعودی عرب (Saudi Arabia) نے ہندستان کے غلط نقشے (India Map) والے تنازعہ کو سلجھا لیا ہے۔ وہاں کی حکومت نے 20 ریال کے اس بینک نوٹ کو واپس لے لیا ہے جس پر ہندستان کا غلط نقشہ چھاپا گیا تھا۔ اس نوٹ میں غیر منقسم جموں وکشمیر (Jammu-Kashmir) اور لداخ (Ladakh) کو ہندستان سے الگ دکھایا گیا تھا۔ نوٹ پر چھپے نقشے کو لے کر ہندستان نے سخت اعتراض کیا تھا۔


ہندستان نے اٹھایا تھا معاملہ


میڈیا رپورٹوں کے مطابق، اس متنازعہ نوٹ کو واپس لینے کے علاوہ اس کی چھپائی کو بھی بند کر دیا گیا ہے۔ بتا دیں کہ 28 اکتوبر کو ریاض میں ہندستان کے سفیر اوصاف سعید نے نوٹ پر غلط نقشے کا معاملہ اٹھایا تھا۔ پچھلے دنوں وزارت خارجہ کے ترجمان انوراگ شری واستو نے بھی سعودی حکام کے ساتھ غلط نقشے کا معاملہ اٹھایا تھا۔ کہا جا رہا ہے کہ 20 ریال کے اس بینک نوٹ کو جی-20 اجلاس کی یادگار کے طور پر نکالا گیا تھا۔

کورونا وائرس وبا کے سائے میں جی۔ 20 ملکوں کے رہنماوں کا چوٹی اجلاس اسی ہفتے سعودی عرب میں ہونے والا ہے اور اس کے اب تک کی روایتی میٹنگوں سے ہٹ کر ہونے کے پورے آثار ہیں۔ یہ میٹنگ ڈیجیٹل طور پر ہو گی اور اس میں دنیا کے دولت مند اور ترقی پذیر ملکوں کے رہنماوں کا جماوڑہ نہیں ہو گا۔ اس کے علاوہ مختلف ملکوں کے حکمرانوں، صدور اور وزرائے اعظم کے درمیان بند کمروں میں ہونے والی میٹنگیں بھی نہیں ہوں گی۔ رہنماوں کے لئے یادگار تصویریں کھنچوانے کا موقع بھی نہیں ملے گا۔




خیال رہے کہ کورونا وائرس کے تیزی سے بڑھتے ہوئے معاملات کے درمیان کل تک دنیا میں اس سے متاثرہ افراد کی تعداد 5.68 کروڑ سے تجاوز کر چکی ہے اور اب تک اس وبائی مرض سے 13.59 لاکھ سے زیادہ افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

پوری دنیا میں درج کیے گئے کورونا کے معاملات میں سے تقریباً 48 فیصد معاملے امریکہ، ہندوستان اور برازیل کے ہیں۔ اس وبا سے متاثرہ افراد اور ہلاک ہونے والوں کی تعداد کے معاملے میں پہلے، دوسرے اور تیسرے مقام پر بالترتیب امریکہ ، ہندوستان اور برازیل ہیں۔ اس انفیکشن سے تیزی سے نجات پانے والوں کی تعداد کے لحاظ سے ہندوستان ، برازیل اور امریکہ بالترتیب پہلے ، دوسرے اور تیسرے نمبر پر ہیں۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Nov 21, 2020 09:11 AM IST