Choose Municipal Ward
    CLICK HERE FOR DETAILED RESULTS
    ہوم » نیوز » عالمی منظر

    رمضان المبارک :مکہ مکرمہ اورمدینہ منورہ میں نمازوں کولیکرکیاگیایہ فیصلہ،سعودی عرب حکومت کااعلان

    ایک ٹویٹ میں واضح کیا ہے کہ اعتکاف ، یا کسی مسجد کے اندر چوکسی رکھنا ، رمضان المبارک کے ساتھ ساتھ پانچ روزانہ کی نمازوں اور خصوصی تراویح سمیت رات میں ادا کی جانی والی تمام نمازیں رمضان کے دوران معطل رہے گی۔

    • Share this:
    رمضان المبارک :مکہ مکرمہ اورمدینہ منورہ میں نمازوں کولیکرکیاگیایہ فیصلہ،سعودی  عرب حکومت کااعلان
    روزانہ کی نمازوں اور خصوصی تراویح سمیت رات میں ادا کی جانی والی تمام نمازیں رمضان کے دوران معطل رہے گی

    رمضان المبارک کے دوران  مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ میں ادا  کی جانے والی نمازیں  معطل کرنے کا فیصلہ کیاگیاہے۔اتناہی نہیں مسجدالحرام  اور  مسجد نبوی میں  ماہ صیام کے دوران  اعتکاف پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔حکام کا کہنا ہے کہ دونوں مساجد میں رمضان کی عبادات کا اہتمام ہوگا لیکن کورونا وائرس کی روک تھام سے متعلق احتیاطی اقدامات کے طور پر مقدس مساجد میں عبادت گزاروں(عوام ) کی شرکت پر پابندی ہوگی۔ دونوں مقدس مساجد   کے امور کے ایوان ِصدر نے ٹویٹر پر تصدیق کی ہے کہ سعودی عرب ، کورونا وائرس  وباء پر قابو پانے کے  مقصد سے  احتیاطی اقدامات کے طور پر رمضان المبارک کے مقدس مہینے کے دوران مکہ مکرمہ میں مسجد الحرام  اور مدینہ منورہ میں مسجد  نبوی ؐ میں ادا کی جانے والی  نمازیں معطل  رہے گی ۔


    سعودی عرب کے مقدس مقامات کے انچارج حکام نے ایک ٹویٹ میں واضح کیا ہے کہ اعتکاف ، یا کسی مسجد کے اندر چوکسی رکھنا ، رمضان المبارک کے ساتھ ساتھ پانچ روزانہ کی نمازوں اور خصوصی تراویح سمیت رات میں ادا کی جانی والی تمام نمازیں رمضان کے دوران معطل رہے گی۔ جنرل کے صدر صدارت برائے امور برائے دو مساجد شیخ عبدالرحمن السدیس نے ایک الگ ٹویٹ میں کہا۔سعودی عرب نے اعلان کیا ہے کہ مسجد حرام اور  مسجد نبویؐ میں تراویح کی 10 رکعت نماز پڑھی جائے گی ۔شیخ عبدالرحمن السدیس امام و انچارج مسجد حرام و مسجد نبوی نے بتایا کہ مسجد حرام و مسجد نبوی میں عام لوگوں کو داخلہ کی اجازت نہیں رہے گی۔ صرف اسٹاف اور ملازمین کو دن میں پانچ وقت کی نماز اور تراویح کی اجازت رہے گی۔ نماز تراویح بند دروازوں کے سامنے پڑھی جائے گی۔ نماز تراویح 20 رکعتوں کے بجائے صرف 10 رکعت ادا کئے جائیں گے۔ واجب الوتر ادا کی جائے گی۔ افطار کا پروگرام منسوخ رہے گا۔ مکہ و مدینہ شہروں میں افطار باسکٹس تقسیم کئے جائیں گے۔ عمرہ بھی تااطلاع ثانی ملتوی رہے گا اور اعتکاف بھی منسوخ رہے گا۔ کورونا وائرس کے پیش نظر مملکت کے کئی شہروں میں کرفیو نافذ ہے



    ہر سال ماہ رمضان ، اسلامی مذہب کا سب سے مقدس مہینہ ، مسلمان، مہینے کے آخری دس دن اعتکاف یا تنہائی میں کسی مسجد کے اندر یا اپنے گھر پر صرف اور صرف نماز پڑھنے اور قرآن پاک پڑھنے کے لئے صرف کرتے ہیں۔سعودی عرب نے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کی کوششوں کے ایک حصے کے طور پر گذشتہ ماہ پوری مملکت میں مساجد کے اندر تمام اجتماعی نمازیں معطل کردی تھیں۔ اس دوران گھر سے باہر صرف مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ کی دو مساجد میں ہی نماز ادا کرنے کی اجازت دی گئی تھی۔


    اس ہفتے کے شروع میں ، سعودی عرب کی سینئر اسکالرز کی کونسل نے دنیا بھر کے مسلمانوں پر زور دیا ہے کہ وہ رمضان کے دوران اپنے گھروں کے اندر نماز ادا کریں اگر وہ ایسے ممالک میں رہتے ہیں جنہوں نے کرفیو اور لاک ڈاؤن جیسے پابندیاں عائد کردی ہیں۔سعودی عرب کے پڑوسی ملک بحرین نے پیر کے روز اعلان کیا ہے کہ وہ رمضان المبارک ، شام اور تراویح کی نمازوں کے دوران ایک محدودتعداد کے ساتھ اپنی الفاتح گرینڈ مسجد کو دوبارہ کھولنے کا فیصلہ کیاہے۔ جہاں صرف امام اور پانچ دیگر نمازیوں کو کسی بھی وقت نماز پڑھنے کی اجازت ہوگی۔
    First published: Apr 21, 2020 07:52 AM IST
    corona virus btn
    corona virus btn
    Loading