یمنی وزارت داخلہ کی عمارت اور احاطے میں سعودی اتحاد کے طیاروں کی بمباری

صنعاء: سعودی اتحاد کے جنگی طیاروں نے یمن کی راجدھانی صنعاء میں وزارت داخلہ کے احاطے میں شدید بمباری کی اور شہر کے وسطی علاقوں میں متعدد دیگر ٹھکانوں کو بھی نشانہ بنایا، یہ اطلاع مقامی باشندوں اور دیگر میڈیا ذرائع نے دی ہے۔

Sep 19, 2015 07:47 PM IST | Updated on: Sep 19, 2015 07:47 PM IST
یمنی وزارت داخلہ کی عمارت اور احاطے میں سعودی اتحاد کے طیاروں کی بمباری

صنعاء: سعودی اتحاد کے جنگی طیاروں نے یمن کی راجدھانی صنعاء میں وزارت داخلہ کے احاطے میں شدید بمباری کی اور شہر کے وسطی علاقوں میں متعدد دیگر ٹھکانوں کو بھی نشانہ بنایا، یہ اطلاع مقامی باشندوں اور دیگر میڈیا ذرائع نے دی ہے۔

خیال رہے کہ سعودی اتحاد نے حالیہ ہفتوں کے دوران اپنی فضائی کارروائیاں سخت کردی ہیں، جبکہ دوسری طرف خلیجی عرب ممالک کی زمینی فوج اور جلاوطن صدر عبدربہ منصور ہادی کے طرفدار فوجی دستے راجدھانی صنعاء پر دوبارہ قبضہ کرنے کے لئے بڑی مہم شروع کرنے کی تیاری میں ہیں، جس پر حوثی انتہاپسند جنگجوؤں نے گزشتہ سال ستمبر 2014 میں قبضہ کرلیا تھا۔

مقامی باشندوں نے بتایا کہ راجدھانی صنعاء کے شمال میں واقع وزارت داخلہ کی عمارتوں، حوثیوں کے زیر کنٹرول پولس کیمپ اور فوجی عمارت پر 10 فضائی حملے کئے گئے۔

حوثیوں کے زیر کنٹرول خبررساں ایجنسی نے آج بتایا کہ ان حملوں کے بعد یمن کی وزارت صحت نے ایک ہنگامی اپیل جاری کی ہے، جس میں اس نے کہا ہے کہ اس پاس صنعاء کے متعدد علاقوں پر کئے گئے فضائی حملوں کے نتیجے میں ہونے والے زخمیوں کے علاج کی گنجائش نہيں ہے۔

Loading...

مقامی باشندوں نے بتایا کہ ان فضائی حملوں میں صدارتی محل اور سابق صدر علی صالح کی پارٹی کی ایک عمارت کو بھی نشانہ بنایا گيا۔ان کے علاوہ ہفتہ کے روز علی الصباح قدیم صنعاء شہر کے فلیحی علاقے پر بھی فضائی حملے کئے گئے جن میں متعدد مکانات تباہ ہوگئے۔

Loading...