ہوم » نیوز » عالمی منظر

سعودی عرب : شہزادہ ولید بن طلال فائیو اسٹار ہوٹل سے جیل منتقل ، حکومت کو خطیر رقم عطیہ کرنے کی بھی پیشکش

سعودی عرب میں بدعنوانی مخالف کے تحت گرفتار کئے گئے امیر ترین سعودی شہزادے ولید بن طلال کو جیل منتقل کردیا گیا ہے ۔

  • Agencies
  • Last Updated: Jan 14, 2018 05:25 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
سعودی عرب : شہزادہ ولید بن طلال فائیو اسٹار ہوٹل سے جیل منتقل ، حکومت کو خطیر رقم عطیہ کرنے کی بھی پیشکش
شہزادہ ولید بن طلال ۔ فوٹو اے ایف پی

ریاض : سعودی عرب میں بدعنوانی مخالف کے تحت گرفتار کئے گئے امیر ترین سعودی شہزادے ولید بن طلال کو جیل منتقل کردیا گیا ہے ۔ بین الاقوامی میڈیا رپورٹس کے مطابق ولید بن طلاق فائیو اسٹار ہوٹل سے جیل منتقل کئے جانے کے بعد حکومت کے ساتھ مذاکرات کیلئے تیار ہوگئے ہیں ۔میڈیا رپورٹس کے مطابق سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کی شرائط نہ ماننے پر ولید بن طلال کو ریاض کے رٹز کارٹن ہوٹل سے 'الہیر جیل منتقل کردیا گیا ہے۔

ادھر نیوز ایجنسی رائٹر کے مطابق شہزادہ ولید بن طلال نے اپنی رہائی کے بدلے حکومت کو خطیر رقم عطیہ کرنے کی بھی پیشکش کی تھی ۔ نیوز ایجنسی رائٹر کے مطابق نام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر ایک سرکاری اہلکار نے بتایا کہ شہزادہ ولید نے خطیر رقم کی پیش کش کی تھی ، مگر وہ ان سے مطلوبہ رقم سے کم ہے اور اٹارنی جنرل نے اب تک اس کو منظوری نہیں دی ہے۔

قابل ذکر ہے کہ گزشتہ سال سعودی حکومت نے بدعنوانی مخالف کمیٹی تشکیل دےکر شہزادہ الولید بن طلال سمیت 11 شہزادوں اور 4 وزرا سمیت درجنوں اعلیٰ حکام کو بدعنوانی کے الزام میں گرفتار کیا تھا اور ان کے خلاف تحقیقات جاری ہیں۔ تاہم گزشتہ سال بدعنوانی الزامات میں گرفتار کچھ شہزادوں کو رہا بھی کردیا گیا تھا ، جن میں سابق فرمانروا شاہ عبداللہ کے دو بیٹے بھی شامل تھے۔ شہزادوں کو سعودی حکومت کے ساتھ مالی معاہدے کے بعد رہا کیا گیاتھا۔

First published: Jan 14, 2018 05:25 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading