உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Saudi Arabia: سعودی عرب میں غیر قانونی مقیم افراد کے بچوں کا تعلیمی مستقبل، اسکولوں میں داخلے کی اجازت

    ضروری اقدامات کو مکمل کرنا ضروری ہے۔

    ضروری اقدامات کو مکمل کرنا ضروری ہے۔

    وزارت تعلیم کے ذرائع کے مطابق اگر سرپرست کے پاس ضروری شناختی دستاویزات حاصل کرنے کے لیے ضروری دستاویزات کی کمی ہے، تو اسے ایک حلف نامہ بھی جمع کرانا ہوگا تا کہ وہ تعلیمی سال کے دوران اپنی رہائش کی حیثیت کو درست کرے گا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • inter, IndiaSaudi ArabiaSaudi Arabia
    • Share this:
      سعودی عرب کے وزارت تعلیم نے منگل کے روز اعلان کیا کہ غیر قانونی طور پر سعودی عرب میں مقیم غیر ملکیوں کے بچوں کو نئے تعلیمی سال کے لیے اسکولوں میں داخلہ لینے کی اجازت دی جائے گی۔ تاکہ وہ بھی تعلیم سے آراستہ ہوسکے اور اپنی مدد آپ کے تحت آگے بڑھ سکے۔ وزارت کے مطابق اسکولوں کو چاہیے کہ وہ مملکت میں غیر قانونی طور پر مقیم بچوں کے والدین کو داخلہ فارم فراہم کریں اور ان سے کہیں کہ وہ ان علاقوں کے دفاتر سے رابطہ کریں جہاں ان کے بچے مقیم ہیں۔ تاکہ مطلوبہ طریقہ کار کو مکمل کرنے کے لیے تمام ضروری اقدامات کو مکمل کیا جاسکے۔

      وزارت تعلیم کے ذرائع کے مطابق اگر سرپرست کے پاس ضروری شناختی دستاویزات حاصل کرنے کے لیے ضروری دستاویزات کی کمی ہے، تو اسے ایک حلف نامہ بھی جمع کرانا ہوگا تا کہ وہ تعلیمی سال کے دوران اپنی رہائش کی حیثیت کو درست کرے گا۔

      یہ بات قابل غور ہے کہ انرولمنٹ فارم میں طالب علم اور اس کے والدین کا پاسپورٹ، رہائشی اجازت نامہ (اقامہ)، وزٹ ویزا کے ساتھ ساتھ ان کے مستقل رہائش کا پتہ اور رابطہ کی معلومات شامل ہوتی ہیں، جن کے پاس متعلقہ دستاویزات نہیں ہیں، انھیں اس کے لیے نااہل قرار دیا جاسکتا ہے اور پہلے ضروری دستاویزت کو بنا لینے کا حکم دیا گیا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      Haramain Sharifain: حرمین شریفین کی جانب سے راجہ سنگھ کی شدید مذمت، جانیے تفصیل

      یہ بھی پڑھیں:

      3 کروڑ سے زیادہ املاک، Sociologyمیں PHD، جانئے کون ہیں RJD MP فیاض احمد، جن کے یہاں پڑی CBI ریڈ

      سعودی حکومت کی جانب سے داخلہ فارم کی منظوری کے بعد غیر ملکی طلبا کے لیے آسانی ہوگی اور وہ بھی سعودی میں رہ کر تعلیم حاصل کرسکیں گے۔ انھیں بتایا گیا ہے کہ وہ داخلہ کے عمل کو مکمل کرنے کے لیے متعلقہ اسکول حکام کے حوالے کرنا چاہیے۔ وزارت نے مملکت سعودی عرب میں محکمہ تعلیم کے حکام کو حکم دیا ہے کہ وہ ہر تعلیمی ضلع میں داخل ہونے والے طلبا کی تعداد کے بارے میں ماہانہ تجزیاتی رپورٹ کے ساتھ مکمل طور پر انتظامات کریں اور اس کے پہلے سے تیاری کریں۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: