உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    افغانستان میں سیکورٹی فورسز کی کارروائی میں 152 دہشت گرد ہلاک، 52 زخمی

    افغانستان میں سیکورٹی فورسز کی کارروائی میں 152 دہشت گرد ہلاک، 52 زخمی۔ فائل فوٹو

    افغانستان میں سیکورٹی فورسز کی کارروائی میں 152 دہشت گرد ہلاک، 52 زخمی۔ فائل فوٹو

    وزارت دفاع کے ایک سینئر عہدیدار فواد امان نے جمعہ کو ٹویٹ کیا کہ گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران لوگر، کنڑ، پکتیا، غزنی، قندھار، بلخ، سمگان، ہلمند، نیمروز اور کاپیسا صوبوں میں سیکورٹی فورسز کے زمینی آپریشن اور فضائی حملوں میں 152 طالبان ہلاک اور 52 دیگر زخمی ہوگئے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      کابل: افغانستان کے مختلف صوبوں میں سیکورٹی فورسز کی کارروائی میں دہشت گرد تنظیم طالبان کے 152 دہشت گرد ہلاک اور 52 زخمی ہوگئے۔ وزارت دفاع کے ایک سینئر عہدیدار فواد امان نے جمعہ کو ٹویٹ کیا کہ گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران لوگر، کنڑ، پکتیا، غزنی، قندھار، بلخ، سمگان، ہلمند، نیمروز اور کاپیسا صوبوں میں سیکورٹی فورسز کے زمینی آپریشن اور فضائی حملوں میں 152 طالبان ہلاک اور 52 دیگر زخمی ہوگئے۔
      فواد امان نے بتایا کہ کمانڈو فورسز نے جمعرات کی رات قندوز کے صوبائی مرکز کے نواح میں ایک آپریشن شروع کیا۔ اس کارروائی کے دوران دہشت گرد تنظیم طالبان کے ایک سینئر کمانڈر سمیت سات عسکریت پسند ہلاک اور 9 زخمی ہوگئے۔
      صوبہ کاپیسا کے ضلع نجراب میں دوسری کارروائی میں فضائیہ نے طالبان کو نشانہ بنایا۔ فضائی حملے کے نتیجے میں 10 دہشت گرد ہلاک اور ان کے اسلحہ اور گولہ بارود کو تباہ کردیا گیا۔ فواد امان نے بتایا کہ سیکورٹی فورسز نے لوگر، کنڑ، پکتیا، غزنی، قندھار، بلخ،سمگن، ہلمند، نمروز صوبوں میں بھی بڑی تعداد میں دہشت گردوں کو ہلاک کیا ہے۔
      اس کے علاوہ کل سیکورٹی فورسز نے صوبہ ہیرات کے ضلع کروخ کو طالبان کے قبضے سے آزاد کرایا۔ اس کے لئے کئے گئے جارحانہ آپریشن میں دسیوں دہشت گرد ہلاک ہوگئے۔ حالانکہ ان کی صحیح تعداد کے بارے میں پتہ نہیں چل سکا ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ ہیرات میں عسکریت پسندوں کے خاتمے کے لئے ایک وسیع آپریشن جاری ہے اور یہ صوبہ جلد ہی طالبان کے قبضے سے مکمل طور پر آزاد ہوجائے گا۔

      Published by:Nisar Ahmad
      First published: