ہوم » نیوز » عالمی منظر

پاکستان نے پھرہندوستان کو دی گیدڑ بھبکی، کہا- اینٹ کا جواب پتھرسے دیں گے

پاکستان کے وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ جب وزیراعظم عمران خان 27 ستمبر کواقوام متحدہ جنرل اسمبلی کی سالانہ میٹنگ میں کشمیرکے معاملےکوسامنے رکھیں گےتودنیا دیکھےگی۔

  • Share this:
پاکستان نے پھرہندوستان کو دی گیدڑ بھبکی، کہا- اینٹ کا جواب پتھرسے دیں گے
پاکستان کے وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے ہندوستان کودی دھمکی۔ فائل فوٹو

پاکستان کے وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نےکہا ہےکہ پورا پاکستان متحد ہےاورملک کے استحکام اورخودمختاری کی حفاظت کرسکتا ہے۔ انہوں نےیہ بھی الزام لگایا کہ ہندوستان نے یوروپین یونین کودوستمبرکوکشمیرموضوع پربحث کرنےکےلئے پاکستان کی درخواست کو تسلیم کرنے سے روکنےکی بےکارکوشش کی۔

ہندوستان کےذریعہ جموں وکشمیرکےخصوصی ریاست کا درجہ کوختم کرنےکےلئےآئین کےبیشترالتزام کومنسوخ کرنےاورریاست کومرکزکےزیرانتظام دوخطوں میں تقسیم کرنے کےبعد دونوں ممالک کےدرمیان کشیدگی میں اضافہ ہوگیا ہے۔ ہندوستان نےمضبوطی سےکہا ہےکہ دفعہ 370 کے بیشترالتزام کومنسوخ کرنا اس کا داخلی معاملہ ہےاوراس کےداخلی معاملات پرغیرذمہ دارانہ بیان دینےاورہندوستان مخالف جذبات بھڑکانےکولےکراس نے پاکستان کی سخت تنقید کی۔

اقوام متحدہ میں اٹھائیں گے مسئلہ کشمیر

پاکستان کےوزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نےکہا کہ جب پاکستان کے وزیراعظم عمران خان 27 ستمبرکواقوام متحدہ جنرل اسمبلی کی سالانہ میٹنگ میں کشمیرکےمعاملےکوسامنے رکھیں گےتودنیا دیکھےگی۔ انہوں نےمیڈیا کی اس خبرکی بھی تردید کی کہ پاکستان ہندوستان کے ساتھ بات چیت کرنے کی کوشش کررہا ہے۔ انہوں نے کہا 'بالکل نہیں'۔ اینٹ کا جواب پتھرسے دیں گے پاکستان کے وزیرخارجہ نے کہا کہ اینٹ کا جواب پتھرسے دیا جائےگا۔ 'ڈان' اخبارنے قریشی کے حوالے سے خبردی ہے، 'ہندوستان سرحد کےسامنے کھڑا ہوکرمیں ہندوطبقے کے ساتھ مودی حکومت کووارننگ دیتا ہوں کہ پورا ملک متحد ہےاوروہ ملک کے استحکام اورخود مختاری کا تحفظ کرسکتا ہے'۔ جنگ نہیں ہے متبادل واضح رہےکہ شاہ محمود قریشی اس سے قبل کہہ چکے ہیں کہ مسئلہ کشمیرحل کرنےکے لئے جنگ کوئی متبادل نہیں ہے۔ ہفتہ کے روزشائع بی بی سی اردو کے ساتھ ایک انٹرویومیں شاہ محمود قریشی نےکہا کہ پاکستان نےکبھی جارحانہ پالیسی نہیں اپنائی اورہمیشہ امن کو ترجیح دی۔ پاکستان کی موجودہ حکومت نےباربارہندوستان کوبات چیت شروع کرنے کی پیشکش کی ہےکیونکہ دونوں جوہری ہتھیاررکھنے والے خوشحال ملک جنگ میں جانےکا خطرہ نہیں اٹھا سکتے ہیں۔
First published: Sep 01, 2019 09:25 PM IST