உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پاکستانی وزیر اعظم شہباز شریف کا آڈیوکلپ وائرل، افسر سے کہا مریم نے کہا ہے... داماد کی مدد کرنی ہے

    پاکستانی وزیر اعظم شہباز شریف کا آڈیو کلپ وائرل

    پاکستانی وزیر اعظم شہباز شریف کا آڈیو کلپ وائرل

    آڈیو کلپ میں ایک شخص کی آواز (پی ٹی آئی جسے شہباز شریف کی آواز بتا رہی ہے) سنی جاسکتی ہے، جو کہہ رہا ہے... ‘مریم نواز شریف نے مجھے ہندوستان سے پاور پلانٹ کی مشینری کی امپورٹ میں اپنے داماد راحیل کی مدد کرنے کے لئے کہا ہے‘۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi, India
    • Share this:
      اسلام آباد: پاکستان کے وزیر اعظم شہباز شریف پر اپنے ایک رشتہ دار کو کسی سرکاری محکمے میں سیٹ کرنے کا الزام لگ رہا ہے۔ ہفتہ کے روز وزیر اعظم اور ایک سرکاری افسر کے درمیان مبینہ بات چیت کا آڈیو لیک ہونے کے بعد سے عمران خان کی پارٹی پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے شہباز شریف اور مریم نواز کے خلاف محاذ کھول دیا ہے۔

      پاکستان تحریک انصاف کے لیڈر فواد چودھری نے اپنے ٹوئٹر اکاونٹ پر شہباز شریف کی بات چیت کی دو منٹ سے زیادہ کی آڈیو ریکارڈنگ شیئر کی ہے۔ اس کی بنیاد پر انہوں نے دعویٰ کیا کہ وزیر اعظم اپنی فیملی اور تجارتی مفاد کو ملک کے مفاد سے آگے رکھتے ہیں۔

      مریم نواز کی بیٹی مہرالنسا نے دسمبر 2015 میں صنعت کار چودھری منیر کے بیٹے راحیل سے شادی کی تھی۔
      مریم نواز کی بیٹی مہرالنسا نے دسمبر 2015 میں صنعت کار چودھری منیر کے بیٹے راحیل سے شادی کی تھی۔


      آڈیو کلپ میں ایک شخص کی آواز (پی ٹی آئی جسے شہباز شریف کی آواز بتا رہی ہے) سنی جاسکتی ہے، جو کہہ رہا ہے… ’مریم نواز شریف نے مجھے ہندوستان سے پاور پلانٹ کی مشینری کی امپورٹ میں اپنے داماد راحیل کی مدد کرنے کے لئے کہا ہے‘۔ پاکستان کے اہم اخبار ‘ڈان‘ کے مطابق، آڈیو کلپ میں افسر کو یہ کہتے ہوئے سنا جاسکتا ہے… ’اگر ہم ایسا کرتے ہیں، تو جب یہ معاملہ ای سی سی اور کابینہ میں جائے گا، تو ہمیں بہت تنقید کا سامنا کرنا پڑے گا‘۔ اس پر وزیراعظم کی مبینہ آواز کو یہ کہتے ہوئے سنا جاسکتا ہے…’داماد مریم نواز کو بہت عزیز ہے۔ انہیں اس بارے میں بہت منطقی طور پر بتائیں اور پھر میں ان سے بات کروں گا‘۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      پاکستان کی جیت کے بعد سیاست کرنے سے باز نہیں آئے پاکستانی وزیر اعظم شہباز شریف، ہندوستان کو مارا طعنہ

      یہ بھی پڑھیں۔

      بیٹی سے شادی کی اجازت، گھومنے کے لئے شوہر سے اجازت! یہ ہیں ایران کے وہ قانون، جو آپ نہیں جانتے ہوں گے

      راحیل مریم نواز شریف کے داماد ہیں

      ڈان کے مطابق، وہی آواز افسر کے ساتھ اس خیال سے بھی اتفاق ظاہر کرتی ہے کہ یہ حکومت کی شبیہ کے لئے برا ہوگا اور خاص طور پر سیاسی پریشانی کی وجہ بن سکتا ہے۔ آپ کو بتادیں کہ مریم نواز کی بیٹی مہرالنسا نے دسمبر 2015 میں صنعت کار چودھری منیر کے بیٹے راحیل سے شادی کی تھی۔ مریم نواز، سابق پاکستانی وزیر اعظم نواز شریف کی بیٹی ہیں۔ ڈان کی خبر کے مطابق، آڈیو کلپ کے آخر میں سابق جج مقبول باقر کا ذکر ہے، جن کو نیشنل جوابدہی بیورو (National Accountability Bureau) کا اگلا سربراہ مانا جا رہا تھا۔

      افسر کو دو میڈیا اہلکاروں کے مشورے کے بارے میں بھی وزیر اعظم شہباز شریف کو بتاتے ہوئے سنا جاسکتا ہے، جس میں وہ این اے بی صدر عہدے کے لئے سابق جسٹس مقبول باقر کے نام پر غور نہیں کرنے کے لئے کہہ رہا ہے۔ افسر شہباز شریف کو این اے بی کے سابق سربراہ جاوید اقبال (جو ایک ریٹائرڈ جج بھی تھے) کے ساتھ تجربوں کی یاد دلاتا ہے، جنہیں اس وقت کی پی ایم ایل-این حکومت کے ذریعہ مقرر کیا گیا تھا۔ وزیر اعظم اور افسر کے درمیان یہ مبینہ بات چیت وائرل ویڈیو کی ایک ٹائم لائن طے کرنے میں بھی مدد کرتا ہے، کیونکہ این اے بی سربراہ کی تقرری کا معاملہ تقریباً دو ماہ پہلے سرخیوں میں آیا تھا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: