ہوم » نیوز » عالمی منظر

ہندوستان کو پاکستان اور چین سے زیادہ ملک میں پنپنے والی فرقہ وارانہ اور سماجی کشیدگی سے خطرہ : مینن

واشنگٹن : سابق قومی سلامتی کے مشیر شیو شنکر مینن نے آج کہا کہ ہندوستان کو پاکستان یا چین سے زیادہ خطرہ ملک کے اندر پنپنے والے فرقہ وارانہ اور سماجی کشیدگی سے ہے

  • UNI
  • Last Updated: Oct 13, 2016 11:34 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ہندوستان کو پاکستان اور چین سے زیادہ ملک میں پنپنے والی فرقہ وارانہ اور سماجی کشیدگی سے خطرہ : مینن
واشنگٹن : سابق قومی سلامتی کے مشیر شیو شنکر مینن نے آج کہا کہ ہندوستان کو پاکستان یا چین سے زیادہ خطرہ ملک کے اندر پنپنے والے فرقہ وارانہ اور سماجی کشیدگی سے ہے

واشنگٹن : سابق قومی سلامتی کے مشیر شیو شنکر مینن نے آج کہا کہ ہندوستان کو پاکستان یا چین سے زیادہ خطرہ ملک کے اندر پنپنے والے فرقہ وارانہ اور سماجی کشیدگی سے ہے۔  مسٹر مینن نے یہاں نامہ نگاروں سے کہا کہ ہندوستان کو پاکستان یا چین سے بڑا خطرہ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا ملک کو حقیقی خطرہ علیحدگی پسند قوتوں سے ہے اور کسی سے نہیں۔ انہوں نے کہا، ’’قومی سلامتی کے سلسلے میں مجھے لگتا ہے کہ اصل خطرہ اندرونی ہے‘‘۔ متحدہ ترقی پسند اتحاد حکومت کے دوسرے دور اقتدار میں جنوری 2010 سے مئی 2014 تک قومی سلامتی کے مشیر رہنے والے مسٹر مینن نے کہا کہ ان کی نظر میں ہندوستان ، ہندوستان کے خیالات اور اس کی سالمیت کو اصلی خطرہ آج ملک کے اندر سے ہی ہے۔

مسٹر مینن نے کہا، ’’اگر تم عورتوں کے خلاف، فرقہ وارانہ، ذات پات پر مبنی تشدد کو دیکھو گے تو یہ لوگوں کی اپنی جڑوں سے دور ہونے، شہری کاری اور مختلف سماجی اور اقتصادی تبدیلیوں کا نتیجہ ہے، جس سے اب بھی نمٹنے کی ضرورت ہے۔ ملک کے سامنے حقیقی خطرے یہ ہیں۔

First published: Oct 13, 2016 11:29 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading