ہوم » نیوز » عالمی منظر

افغانستان: کابل میں عیدالاضحیٰ کی نماز کے دوران راشٹرپتی بھون کے پاس داغے گئے راکٹ

کابل: افغانستان (Afghanistan) میں طالبان (Taliban) کی دہشت گردانہ کارروائیوں کے درمیان منگل کو عیدالاضحیٰ (Eid-ul-Azha 2021) کا تیوہار منایا جا رہا ہے۔ اس دوران کابل میں راشٹرپتی بھون کے پاس راکٹ سے حملے کی کوشش ہوئی۔

  • Share this:
افغانستان: کابل میں عیدالاضحیٰ کی نماز کے دوران راشٹرپتی بھون کے پاس داغے گئے راکٹ
کابل میں عیدالاضحیٰ کی نماز کے دوران راشٹرپتی بھون کے پاس داغے گئے راکٹ

کابل: افغانستان (Afghanistan) میں طالبان (Taliban) کی دہشت گردانہ کارروائیوں کے درمیان منگل کو عیدالاضحیٰ (Eid-ul-Azha 2021) کا تیوہار منایا جا رہا ہے۔ اس دوران کابل میں راشٹرپتی بھون کے پاس راکٹ سے حملے کی کوشش ہوئی۔ فی الحال اس حملے میں کسی کے جانی ومالی نقصان کی اطلاع نہیں ہے۔ افغانستان کی سرکاری ایجنسی ٹولو نیوز نے اس کی اطلاع دی ہے۔



وزارت داخلہ کے ترجمان میر وائس اسٹانک زئی ’آج افغانستان کے دشمنوں نے کابل شہر کے مختلف حصوں میں راکٹ حملے کئے۔ سبھی راکٹ تین الگ الگ حصوں سے ٹکرائے۔ ہماری ابتدائی اطلاع کی بنیاد پر کوئی نقصان نہیں ہوا ہے۔ ہماری ٹیم جانچ کر رہی ہے‘۔

حملے کے کچھ منٹ بعد اشرف غنی نے اپنے کچھ بڑے افسران کی موجودگی میں قوم کے نام ایک خطاب شروع کیا۔ واضح رہے کہ راشٹرپتی بھون کو ماضی میں کئی بار راکیٹ سے نشانہ بنایا جا چکا ہے، آخری بار دسمبر میں راشٹرپتی بھون پر حملہ ہوا تھا۔

طالبان کا کنٹرول افغانستان کے کل 421 اضلاع اور ضلع مراکز میں سے ایک تہائی سے بھی زیادہ پر ہے۔ حالانکہ طالبان کا یہ دعویٰ بڑھا چڑھا کر کیا گیا لگتا ہے کہ انہوں نے 85 فیصد سے زیادہ اضلاع پر قبضہ کرلیا ہے۔ (ایجنسی اِن پُٹ)
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 20, 2021 10:14 AM IST