ہوم » نیوز » عالمی منظر

بدعنوانی کے الزامات میں جنوبی کوریا کی سابق صدر کو 24 برس قید کی سزا

جنوبی کوریا کی سابق صدر اور ملک کی سابق تاناشاہ پارک چنگ کی بیٹی پارک گیون ہئی کو بدعنوانی کے معاملہ میں 24برس قید کی سزا سنائی گئی ہے

  • UNI
  • Last Updated: Apr 06, 2018 11:56 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
بدعنوانی کے الزامات میں جنوبی کوریا کی سابق صدر کو 24 برس قید کی سزا
علامتی تصویر

سیول: جنوبی کوریا کی سابق صدر اور ملک کی سابق تاناشاہ پارک چنگ کی بیٹی پارک گیون ہئی کو بدعنوانی کے معاملہ میں 24برس قید کی سزا سنائی گئی ہے اور 18ارب وون کر جرمانہ لگایا گیا ہے۔ محترمہ پارک (66)پر اپنی سہیلی چوئی سن سل کے ذریعہ رشوت لیکر اسمارٹ فون بنانے والی دنیا کی سرفہرست کمپنی سیمسنگ اور ملٹی نیشنل کمپنی لاٹو کو فائدہ پہنچانے کا الزام ہے۔ اس کے علاوہ ان پر حکام کے ساتھ بدسلوکی کرنے اور حکومت کے خفیہ دستاویز لیک کرنے کا بھی الزام ہے۔

محترمہ پارک طریقہ سے منتخب کی گئی ملک کی ایسی پہلی لیڈر ہیں جنہیں گزشتہ برس آئینی عدالت نے بدعنوانی کے الزام میں عہدہ سے ہٹانے کا حکم دیا تھا۔ محترمہ پارک کو 24برس کی سزا سناتے ہوئے جج کم سے یون نے کہاکہ مدعی نے صدر کے عہدہ کا غلط استعمال کیا اور عوامی تائید کی توہین کی ہے۔ سابق صدر کے اس طرح قدم سے ملک کی امن و قانون صورتحال گڑ بڑا گئی اور ہنگامہ مچ گیا جس کے بعد مواخذہ کی تحریک لاکر انہیں گزشتہ برس عہدہ چھوڑنے پر مجبور کیا گیا۔ ملک کے لئے یہ بدقسمتی کا لمحہ تھا۔

جج نے کہا کہ محترمہ پارک نے کہیں سے بھی تفریق جیسا سلوک نہیں دکھایا ۔ اس کے برعکس انہوں نے خود پر لگائے گئے الزامات کو اپنی سہیلی کے سرڈال دیا ۔محترمہ پارک نے چوئی کے ساتھ مل کر سیمسنگ سے 29.8ارب وون رشوت لی تھی۔سماعت کے دوران محترمہ پارک عدالت میں موجود نہیں تھیں اور انہوں نے تمام الزامات کو غلط بتایا۔ تقریباََ 1000ان کے حامی عدالت کے باہر جمع ہوگئے تھے اور انتقامی کارروائی کو روکنے کی مانگ کررہے تھے۔

محترمہ پارک گزشتہ 31مارچ سے جیل میں بند ہیں ۔ پارلیمنٹ میں مواخذے کی تجویز پاس کے بعد آئینی عدالت نے دس مارچ کو پارک کو صدر کے عہدہ سے ہٹانے کا حکم دیا تھا۔محترمہ پارک 2012میں انتخابات کے بعدراشٹرپتی بھون واپس آئی تھیں ۔ تقریباََ تین دہائی پہلے انہوں نے اپنے تاناشاہ والد کے قتل کے بعد راشٹرپتی بھون چھوڑا تھا۔ وہ ملک کی پہلی خاتون صدر بنیں۔ گزشتہ برس ان کو عہدہ سے ہٹائے جانے کے بعد ہوئے انتخابات میں مسٹر مون جے ان صدر بنے۔

محترمہ پارک کی سزا پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے مسٹر مون کے دفتر نے کہاکہ آج کا دن پورے ملک کے لئے بدقسمتی والا ثابت ہوا ہے۔ اگر تاریخ سے سبق نہیں لیا جائے گا تو تاریخ خود کو دہرائے گی۔محترمہ پارک کی ساتھی سون سل چوئی پر الگ سے معاملہ چلایا گیا تھا اور اسے اس برس فروری میں 20برس قید کی سزا سنائی گئی تھی۔

First published: Apr 06, 2018 11:56 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading