ہوم » نیوز » عالمی منظر

اسپین میں مسلم طالبہ کو حجاب پہن کر تعلیم حاصل کرنے کی ملی اجازت

اسپین میں برقع پہننے کے سبب ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ کے ذریعہ ایک مسلم طالبہ کو ٹریننگ دینے سے منع کر دئیے جانے پر تنازعہ پیدا ہو گیا تھا۔

  • Agencies
  • Last Updated: Sep 21, 2016 04:56 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
اسپین میں مسلم طالبہ کو حجاب پہن کر تعلیم حاصل کرنے کی ملی اجازت
تصویر: ڈان نیوز

میڈرڈ۔ اسپین میں برقع پہننے کے سبب ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ کے ذریعہ ایک مسلم طالبہ کو تعلیم  دینے سے منع کر دئیے جانے پر تنازعہ پیدا ہو گیا تھا۔ مقامی انتظامیہ کو جب اس کی اطلاع ملی تو اس نے اس معاملہ میں مداخلت کی اور اب مسلم طالبہ کوکلاس کے دوران برقع پہننے کی اجازت دے دی گئی ہے۔ خیال رہے کہ اسپین میں مسلمانوں کی آبادی کُل آبادی کا تقریباً 4 فیصد ہے۔  تقویٰ رجب کو کلاس سے نکالے جانے کے بعد بے چینی کی صورتحال پیدا ہوگئی تھی۔

عرب نیوز کے مطابق، اسپین کے مشرقی شہر ویلنسیا میں پیدا ہونے والی 23 سالہ تقویٰ رجیب کا حجاب کے ساتھ تعلیم حاصل کرنے کی اجازت ملنے کے بعد کہنا تھا کہ ’میں بہت زیادہ خوش ہوں کیونکہ میں صرف یہی چاہتی تھی کہ مجھ سے میرا تعلیم حاصل کرنے کا حق نہ چھینا جائے۔‘


تقویٰ رجیب کے اس معاملے پر تعصب اور نسلی امتیاز کے خلاف کام کرنے والی ’ایس او ایس ریسزمے ایسوسی ایشن‘ نے روشنی ڈالی تھی۔


 تقویٰ رجیب کو جب کلاس میں آنے سے روک دیا گیا تو انہوں نے اس کی زبردست مخالفت کی جس کے بعد یہ معاملہ اسپین میں گرما گیا ۔ عرب نیوز کے مطابق، اسپین میں حجاب پر پابندی لگانے والا کوئی قانون نہیں ہے اور حجاب پر پابندی کا معاملہ اس ملک میں اب بھی موضوع بحث بنا ہوا ہے۔ دریں اثنا، رجیب کو حجاب پہن کر ٹریننگ کی اجازت ملنے پر انسٹی ٹیوٹ نے کچھ بھی کہنے سے انکار کر دیا ہے۔

First published: Sep 21, 2016 04:50 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading