உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Sri Lanka Crisis:کارگزار صدر نے اسپیکر سے کہا-ایسا وزیراعظم نامزد کریں جو حکومت اور اپوزیشن دونوں کو قبول ہو

    Youtube Video

    Sri Lanka Crisis: وزیر اعظم کے دفتر سے جاری بیان کے مطابق وکرماسنگھے نے اپنے دفتر میں کابینہ کے ارکان کے ساتھ میٹنگ کی۔ اس میں کہا گیا کہ اجلاس میں شامل تمام وزراء کی رائے تھی کہ جیسے ہی آل پارٹیز حکومت بنانے کا معاہدہ ہوگا، وہ نئی حکومت کو ذمہ داری سونپ دیں گے۔

    • Share this:
      Sri Lanka Crisis:کولمبو: سری لنکا (Sri Lanka)میں زبردست مظاہروں کے درمیان نئی حکومت کی تشکیل کو لے کر الجھن برقرار ہے۔ اس درمیان، قائم مقام صدر اور وزیر اعظم رانیل وکرمے سنگھے (Ranil Wickreme Singhe)نے پارلیمنٹ کے اسپیکر مہندا یاپا ابھے وردھنے(Mahindra Yapa Abhaywardene) سے کہا کہ وہ ایسے وزیر اعظم کو نامزد کریں جو حکومت اور اپوزیشن (Opposition)دونوں کے لیے قابل قبول ہو۔

      وزیر اعظم کے دفتر سے جاری بیان کے مطابق وکرماسنگھے نے اپنے دفتر میں کابینہ کے ارکان کے ساتھ میٹنگ کی۔ اس میں کہا گیا کہ اجلاس میں شامل تمام وزراء کی رائے تھی کہ جیسے ہی آل پارٹیز حکومت بنانے کا معاہدہ ہوگا، وہ نئی حکومت کو ذمہ داری سونپ دیں گے۔

      مالدیپ کے بعد کہاں جائیں گے صدر گوٹابایاراجاپکسہ؟
      وکرما سنگھے پر صدر گوٹابایا راجا پکسے کے ممکنہ استعفیٰ سے قبل استعفیٰ دینے کا دباؤ ہے۔ کہا جا رہا ہے کہ راجا پکسے مالدیپ سے سنگاپور جا رہے ہیں۔ وکرماسنگھے کے دفتر میں داخل ہونے والے مظاہرین پارلیمنٹ ہاؤس کے احاطے میں داخل ہونے کی کوشش کر رہے ہیں۔ پولیس نے بتایا کہ سیکورٹی فورسز نے پارلیمنٹ کے اسپیکر کی سرکاری رہائش گاہ کے قریب مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے آنسو گیس کے گولے داغے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      Gotabaya Rajapaksa:سری لنکا کے صدر گوٹابایا راجا پکسے ملک چھوڑ کر فرار،مالدیپ پہنچے

      یہ بھی پڑھیں:
      Chinaکے بینکوں میں جمع کرانے والوں کاکیش نکالنے سے روکنے پراحتجاج,حاملہ خواتین کی پٹائی

      مظاہروں کے دوران ایک نوجوان کی ہوئی موت
      مظاہرے کے دوران ایک نوجوان کی سانس لینے میں دشواری کے باعث موت ہوگئی۔ وہ اس گروپ میں شامل تھا جس نے صبح وزیر اعظم کے دفتر پر دھاوا بولا تھا۔ اس واقعے میں 35 دیگر زخمی بھی ہوئے ہیں۔ وزیراعظم کے میڈیا ڈپارٹمنٹ نے کہا کہ حکمران جماعت اور اپوزیشن کو مل کر آل پارٹیز حکومت بنانا چاہیے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: