உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سری لنکا: اپوزیشن لیڈر ساجتھ پریم داسا نے عہدہ ٹھکرایا، مہندر راج پکشے دے سکتے ہیں استعفیٰ

    سری لنکا: اپوزیشن لیڈر ساجتھ پریم داسا نے عہدہ ٹھکرایا

    سری لنکا: اپوزیشن لیڈر ساجتھ پریم داسا نے عہدہ ٹھکرایا

    Srilanka Crisis News: سری لنکا کے صدر گوٹبایا راج پکشے نے مبینہ طور پر اپوزیشن لیڈر سماگی جن بالویگیا (ایس جے بی) پارٹی کے ساجتھ پریم داسا کو عبوری حکومت بنانے کے لئے مدعو کیا۔

    • Share this:
      کولمبو: سری لنکا میں چل رہے اقتصادی بحران کے درمیان آئندہ پیر کے روز یعنی کل سری لنکا کے وزیر اعظم مہندا راج پکشے کے ذریعہ عہدہ چھوڑنے کی امید ہے۔ ایسے میں سری لنکا کے صدر گوٹ بایا راج پکشے نے اپوزیشن کے لیڈر سماگی جن بال ویگیا (ایس جے بی) پارٹی کے ساجتھ پریم داسا کو عبوری حکومت بنانے کے لئے مدعو کیا۔ حالانکہ، اپوزیشن نے وزیرا عظم عہدہ کی پیشکش کو مسترد کردیا ہے۔ سماگی جانا بالویگیا (ایس جے بی) کے قومی آرگنائزر اتسنائیکے نے مبینہ طور پر مطلع کیا ہے۔

      رپورٹ کے مطابق، پریم داسا کو ہفتہ کی صبح صدر راج پکشے نے فون کیا تھا اور انہیں سری لنکا کے وزیر اعظم عہدہ  کو سنبھالنے کے لئے مدعو کیا گیا تھا کیونکہ ملک اقتصادی بحران اور مالی مندی سے جدوجہد کر رہا ہے۔

      حالانکہ پریم داسا نے اس تجویز کو مسترد کردیا ہے۔ ایس جے بی کے قومی آرگنائزر ٹسا اتسنائیکے نے سری لنکا کی میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے بتایا کہ عبوری حکومت میں وزیر اعظم عہدہ کے آفر کو پریم داسا نے قبول نہیں کیا ہے۔ تاہم ایس جے بی عبوری حکومت کو بلا شرط حمایت دے سکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم صرف اس حکومت کو حمایت دیں گے، جو بار ایسوسی ایشن کے ذریعہ بنائی گئی تجویز کو قبول کرے گی۔ واضح رہے کہ سری لنکا کے وزیر اعظم اور صدر کے خلاف اپوزیشن نے دو بار اسپیکر کو تحریک عدم اعتماد سونپی ہے۔

      ساجتھ پریم داسا نے کہا کہ یہ واضح ہوگیا ہے کہ کس نے لوگوں کا مطالبہ کے ساتھ دھوکہ کیا ہے۔ اس کے علاوہ پریم داسا نے یہ بھی الزام لگایا ہے کہ موجودہ حکومت نے ملک کو بینک کرپٹ ہونے کی دہلیز پر دھکیل دیا ہے۔ اس کے علاوہ انہوں نے یہ بھی کہا کہ سری لنکا کی تاریخ میں ایسی صورتحال پہلی بار پیدا ہوئی ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: