ہوم » نیوز » عالمی منظر

سوتیلی ماں نے 16 سال کے بیٹے سے 2 سال تک زبردستی روز بنائے جسمانی تعلقات، پھر ہوا یہ

لڑکے نے کورٹ کو بتایا جب وہ صرف 15 سال کا تھا تبھی سے اس کی سوتیلی ماں اس سے فلرٹ کررہی تھی۔ اس کی 16ویں سالگرہ کے بعد دونوں میں پہلی مرتبہ جسمانی تعلقات بھی بنے۔ بعد میں اس کی سوتیلی ماں روز اسے سیکس کرنے کیلئے مجبور کرنے لگی۔ بعد میں خاتون نے لڑکے کو یہ کہہ کر بھی بلیک میل کیا کہ وہ حاملہ ہوگئی ہے اور بچہ اس کا ہے۔ حالانکہ پولیس نے تفتیش میں پایا کہ خاتون ذہنی بیماری سے جوجھ رہی ہے اور اسے ملٹیپلس پرسنیلٹی ڈس آرڈر تھا جس کا اس نے کافی وقت تک علاج کرایا ہے۔

  • Share this:
سوتیلی ماں نے 16 سال کے بیٹے سے 2 سال تک زبردستی روز بنائے جسمانی تعلقات، پھر ہوا یہ
لڑکے نے کورٹ کو بتایا جب وہ صرف 15 سال کا تھا تبھی سے اس کی سوتیلی ماں اس سے فلرٹ کررہی تھی۔ اس کی 16ویں سالگرہ کے بعد دونوں میں پہلی مرتبہ جسمانی تعلقات بھی بنے۔ بعد میں اس کی سوتیلی ماں روز اسے سیکس کرنے کیلئے مجبور کرنے لگی۔ بعد میں خاتون نے لڑکے کو یہ کہہ کر بھی بلیک میل کیا کہ وہ حاملہ ہوگئی ہے اور بچہ اس کا ہے۔ حالانکہ پولیس نے تفتیش میں پایا کہ خاتون ذہنی بیماری سے جوجھ رہی ہے اور اسے ملٹیپلس پرسنیلٹی ڈس آرڈر تھا جس کا اس نے کافی وقت تک علاج کرایا ہے۔

لندن: برطانیہ (Britain) کے کیسل ہل (Castle Hill) میں ایک ایسا معاملہ سامنے آیا ہے جس میں ایک سوتیلی ماں (stepmother)  دو سال تک ہر روز اپنے 16 سال کے بیٹے(stepson )  کے ساتھ زبردستی بناتی رہی۔ جب بات عدالت میں پہنچی تو ماں کہہ رہی ہے کہ بیٹے مرضی سے ہی سب کچھ ہوا ہے۔ حالانکہ اب کورٹ نے اسے 5 سال کی سخت سزا سنائی ہے۔

ڈیلی اسٹار کی رپورٹ کے مطابق 38 سالہ یہ خاتون گزشتہ 2 سال سے اپنے بیٹے کو زبردستی سیکس کرنے پر مجبور کررہی تھی۔ پورا معاملہ سامنے تب آیا جب خاتون کے شوہر کو اس بات کا شک ہوا اور اس نے کمرے میں ایک ساؤنڈ ریکارڈر چھپا دیا۔ اس ریکارڈر میں خاتون کی بات چیت درج ہوگئی جس سے شوہر کو پورےمعاملے کی اطلاع ملی۔

ریکارڈنگ سننے کے بعد جب غصے میں اس خاتون کے شوہر نے سوال کیا تو اس نے جواب میں کہا کہ وہ 16 سال کا ہے اور ہم صرف تھوڑا مزہ کررہے تھے۔ بعد میں والد نے ہی بیٹے کے جنسی استحصال کی شکایت درج کرائی تھی۔ لڑکے کی وکیل لورا پٹ میں نے کورٹ کو بتایا کہ بھلے ہی سیکس کیلئے کنسینٹ کی عمر 16 ہے لیکن پھر بھی سوتیلی ماں ہونے کے ناطے یہ قانوناً جرم ہی مانا جائے گا۔ یہاں تک کہ تعلقات بنانے کیلئے یہ خاتون لڑکے کو مسلسل بلیک میل بھی کررہی تھی۔

لڑکے نے کورٹ کو بتایا جب وہ صرف 15 سال کا تھا تبھی سے اس کی سوتیلی ماں اس سے فلرٹ کررہی تھی۔ اس کی 16ویں سالگرہ کے بعد دونوں میں پہلی مرتبہ جسمانی تعلقات بھی بنے۔ بعد میں اس کی سوتیلی ماں روز اسے سیکس کرنے کیلئے مجبور کرنے لگی۔ بعد میں خاتون نے لڑکے کو یہ کہہ کر بھی بلیک میل کیا کہ وہ حاملہ ہوگئی ہے اور بچہ اس کا ہے۔ حالانکہ پولیس نے تفتیش میں پایا کہ خاتون ذہنی بیماری سے جوجھ رہی ہے اور اسے ملٹیپلس پرسنیلٹی ڈس آرڈر تھا جس کا اس نے کافی وقت تک علاج کرایا ہے۔


 
First published: Mar 12, 2020 10:07 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading