உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کووڈ ویکسین لگواکر کروڑ پتی بن گئی لڑکی، ٹیکہ لگوانے سے ہوا یہ بڑا فائدہ: جانیں کیسے

    ۔ ایسا ہی ایک آفر کا فائدہ اٹھاتے ہوئے آسٹریلیا کی Joanne Zhu ویکسین (Australian Girl Becomes Millionaire) کی وجہ سے کروڑ پتی بن گئی ہیں۔

    ۔ ایسا ہی ایک آفر کا فائدہ اٹھاتے ہوئے آسٹریلیا کی Joanne Zhu ویکسین (Australian Girl Becomes Millionaire) کی وجہ سے کروڑ پتی بن گئی ہیں۔

    Joanne Zhu کو یہ انعام ملین ڈالر ویکس مہم کے تحت ملا ہے۔ اس آفر کے ذریعے آسٹریلیا کے 30 لاکھ لوگوں کو ویکسین لگوانے کے عوض جیک پاٹ جیتنے کا موقع دیا گیا تھا۔ جوان زو کو خود نہیں معلوم تھا کہ ویکسینیشن کی وجہ سے وہ دیکھتے ہی دیکھتے کروڑ پتی بن جائے گی۔ یہ سب ایک خواب جیسا تھا۔

    • Share this:
      کورونا ویکسین یوں تو لوگوں کی حفاظت کے لیے انہیں لگائی جاتی ہے۔ پھر بھی حکومت کو لوگوں کو یہ باور کرانے میں وقت لگتا ہے کہ یہ واقعی ان کے فائدے کے لیے ہے۔ حکومتیں اپنے لوگوں کو ویکسینیشن کے بدلے و دلچسپ پیشکشیں(Exciting offers for Vaccination)  بھی دے رہی ہیں۔ ایسا ہی ایک آفر کا فائدہ اٹھاتے ہوئے آسٹریلیا کی Joanne Zhu ویکسین  (Australian Girl Becomes Millionaire)  کی وجہ سے  کروڑ پتی بن گئی ہیں۔

      Joanne Zhu کو یہ انعام ملین ڈالر ویکس مہم کے تحت ملا ہے۔ اس آفر کے ذریعے آسٹریلیا کے 30 لاکھ لوگوں کو ویکسین لگوانے کے عوض جیک پاٹ جیتنے کا موقع دیا گیا تھا۔ جوان زو کو خود نہیں معلوم تھا کہ ویکسینیشن کی وجہ سے وہ دیکھتے ہی دیکھتے کروڑ پتی بن جائے گی۔ یہ سب ایک خواب جیسا تھا۔

      لگ گئی 1 ملینUSD کی لاٹری
      25 سالہ Joanne Zhu کا شمار آسٹریلیا کے ان عام شہریوں میں ہوتا ہے جنہوں نے کورونا ویکسین لگوانے کے لیے رجسٹریشن کرایا تھا۔ ڈیلی اسٹار کی رپورٹ کے مطابق 'دی ملین ڈالر ویکس مہم'  (The Million Dollar Vax Campaign) اس وقت آسٹریلیا میں چل رہی ہے، جس میں جان ژو نے خود کو رجسٹر کرایا تھا۔ انہوں نے سرکاری ٹیکہ کاری مہم کے تحت ویکسینیشن کروائی اور لکی ڈرا میں انہیں تقریباً 7.4 کروڑ کی لاٹری لگ گئی۔

      وہ لڑکی جو 30 لاکھ لوگوں میں سب سے خوش قسمت نکلی۔
      سرکاری لکی ڈرا میں تقریباً 30 لاکھ لوگوں نے حصہ لیا تھا۔ تاہم، جوان کو اندازہ نہیں تھا کہ اس کی قسمت میں کروڑوں کی لاٹری آنے والی ہے۔ اس نے لاٹری کے لیے پہلی کال بھی نہیں اٹھائی، بعد میں اسے معلوم ہوا کہ اس نے جیک پاٹ جیت لیا ہے۔ نہ صرف آسٹریلوی حکومت بلکہ سماجی کارکنوں اور فلاحی تنظیموں نے مل کر لاٹری کی رقم دی ہے۔ آسٹریلیا کی کورونا ویکسینیشن ڈرائیو میں اس مہم کو بہت اچھا رسپانس ملا ہے۔

       
      Published by:Sana Naeem
      First published: