உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سوڈان کے دارفر میں کیمیائی ہتھیار کے استعمال کا الزام

    فائل تصویر

    فائل تصویر

    نیویارک۔ ایمنسٹي انٹر نیشنل نے آج کہا کہ سوڈان کی فوج نے دارفر کے جبل المعرہ علاقے میں اپنے حملوں میں جنوری سے اب تک کم از کم 30 کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال کیا ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      نیویارک۔  ایمنسٹي انٹر نیشنل نے آج کہا کہ سوڈان کی فوج نے دارفر کے  جبل المعرہ علاقے میں اپنے حملوں میں جنوری سے اب تک کم از کم 30 کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال کیا ہے۔ عالمی تنظیم نے اس سلسلے میں دو ماہرین کا حوالہ دیا۔ ایمنسٹي انٹر نیشنل کا کہنا ہے کہ کیمیائی ہتھیاروں کے حملے کی زد میں 250 افراد کی موت ہوئی ہے۔ کیمیائی ہتھیاروں کا تازہ حملہ 9 ستمبر کو کیا گیا۔


      ایمنسٹي انٹر نیشنل نے کیمیائی ہتھیاروں کے حملے کی بات اپنی ایک تازہ رپورٹ میں کہی ہے۔ اس سلسلے میں اس نے 200 لوگوں کی گواہی لی ہے اور سٹیلائٹ کی تصویر کے استعمال کے ساتھ زخمیوں کی تصویروں کا تجزیہ بھی کیا ہے۔ خیال رہے کہ کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کو جنگی جرائم سمجھا جاتا ہے۔ حقوق انسانی کی عالمی تنظیم کا کہنا ہے کہ " ہمارے شواہد معتبر ہیں اور ان سے ظاہر ہوتا ہے کہ سوڈان حکومت دارفر میں شہری آبادیوں کو ہلاک کرنے کے لئے براہ راست حملے کرنے میں ملوث ہونے کا ارادہ رکھتی ہے۔


      دریں اثناء، اقوام متحدہ میں سوڈانی سفیر عمر ذھب فاضل محمد نے ایک بیان میں کہا کہ ایمنسٹی کی رپورٹ بے بنیاد ہے اور سوڈان کسی طرح کے کیمیائی اسلحے کا استعمال نہيں کرتا ہے۔

      First published: