ہوم » نیوز » عالمی منظر

سارک اجلاس کے بیچ میں اٹھ کر چلی گئیں سشما سوراج، پاکستان کے وزیر خارجہ بھڑکے

وزیر خارجہ سشما سوراج کی جمعرات کو نیویارک میں سارک اجلاس کے دوران پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے ملاقات نہیں ہوئی۔

  • Share this:
سارک اجلاس کے بیچ میں اٹھ کر چلی گئیں سشما سوراج، پاکستان کے وزیر خارجہ بھڑکے
اقوام متحدہ اسمبلی اجلاس میں وزیر خارجہ سشما سوراج: فوٹو، پی ٹی آئی۔

وزیر خارجہ سشما سوراج نے جمعرات کو نیویارک میں سارک اجلاس کے دوران اپنے خطاب میں دہشت گردی کے خاتمے کے لئے مل کر کام کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ لوگوں کی اقتصادی ترقی، ترقی اور علاقائی تعاون کے لئے امن اور سلامتی کا ماحول بہت اہم ہے۔


پاکستان پر نشانہ سادھتے ہوئے سوراج نے کہا کہ ہمارے خطے میں امن اور استحکام کے لئے دہشت گردی واحد سب سے بڑا خطرہ ہے۔ یہ ضروری ہے کہ دہشت گردی کی بیخ کنی کے لئے بغیر کسی بھید بھاو کے حمایت کی جائے۔"


وہیں، پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے سشما سوراج کی ملاقات نہیں ہوئی۔ سارک میں بیان دینے کے بعد سشما سوراج وہاں سے چلی گئیں اور انہوں نے قریشی کے بیان کا انتظار نہیں کیا۔ پاکستان کے وزیر خارجہ محمود قریشی نے اس پر اعتراض کیا۔


قریشی نے کہا، " ہم دونوں کے درمیان کوئی ملاقات نہیں ہوئی۔ وہ (سشما سوراج) بیچ میں ہی چلی گئیں۔ شاید وہ ٹھیک محسوس نہیں کر رہی تھیں۔ میں نے ان کا بیان سنا ، انہوں نے علاقائی تعاون کے بارے میں بات کی۔ علاقائی تعاون کیسے ممکن ہے جب ہر کوئی بیٹھ کر بات کرنے کو تیار ہے اور آپ یہ نہیں چاہتے۔ "

یہ بھی پڑھیں: اقوام متحدہ میں نہیں ہوگی سشما سوراج اور محمود قریشی کی ملاقات ، ہندوستان نے منسوخ کی میٹنگ

ذرائع ابلاغ اے این آئی کے مطابق، ذرائع نے بتایا کہ، "وزیر خارجہ سے پہلے افغانستان اور بنگلہ دیش کے وزرائے خارجہ اجلاس سے جا چکے تھے۔ وزیر خارجہ سشما سوراج بھی اپنے خطاب کے بعد چلی گئیں۔  وزیر خارجہ اس لئے اجلاس کو چھوڑ کر چلی گئیں کیونکہ انہیں بھارتی کمیونٹی گروپوں اور دیگر دو طرفہ مذاکرات میں شامل ہونا تھا۔ "

یہ بھی پڑھیں: پی ایم مودی نے عمران خان کو خط لکھ کر دی بات چیت کی دعوت ، پاک وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا دعویٰ
First published: Sep 28, 2018 09:26 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading