உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ڈرون حملے میں گئی عام شہریوں کی جان، ناراض طالبان نے کہا- کوئی خطرہ تھا تو ہمیں بتاتا امریکہ

    ڈرون حملے میں گئی عام شہریوں کی جان، ناراض طالبان نے کہا- کوئی خطرہ تھا تو ہمیں بتاتا امریکہ

    ڈرون حملے میں گئی عام شہریوں کی جان، ناراض طالبان نے کہا- کوئی خطرہ تھا تو ہمیں بتاتا امریکہ

    Afghanistan Crisis: طالبان کے ترجمان نے ذبیح اللہ مجاہد نے اتوار کو کہا تھا کہ امریکی فوج کے ہوائی حملے میں ایک گاڑی میں بیٹھے خودکش حملہ آوروں کو نشانہ بنایا گیا ہے۔

    • Share this:
      کابل: طالبان (Taliban) کے ایک ترجمان نے کہا کہ اتوار کو کابل (Kabul) میں مشکوک خودکش حملہ آور کو نشانہ بناکر کئے گئے امریکی ڈرون حملے میں شہری جاں بحق ہوئے۔ ترجمان نے امریکہ کے ذریعہ حملہ کرنے کی اطلاع طالبان کو نہ دینے پر بھی ناراضگی ظاہر کی ہے۔ طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے پیر کے روز چین کے سرکاری ٹیلی ویژن سی جی ٹی این سے کہا کہ امریکی ڈرون حملے میں سات لوگ مارے گئے۔ ساتھ ہی انہوں نے امریکی کارروائی کو غیر ملکی سرزمین پر غیرقانونی بتایا۔ ذبیح اللہ مجاہد نے سی جی ٹی این کو دیئے ایک جواب میں کہا، ’اگر افغانستان میں کوئی خطرہ تھا تو منمانا حملہ کرنے کے بجائے ہمیں اس کی اطلاع دی جانی چاہئے تھی‘۔

      اس سے قبل طالبان کے ترجمان نے کہا تھا کہ امریکی فوج کے ہوائی حملے میں ایک گاڑی میں بیٹھے خود کش حملہ آور کو نشانہ بنایا گیا ہے، جو امریکہ کے ملک سے جانے کے درمیان ایئر پورٹ پر حملہ کرنے کی فراق میں تھا۔ ترجمان نے صحافیوں کو بھیجے ایک پیغام میں کہا تھا کہ یہ حملہ اتوار کو ہوا۔ امریکی فوجی افسران سے تبصرہ کے لئے فوراً رابطہ نہیں ہوسکا۔

      پولیس نے کہا ہے کہ کابل کے بین الاقوامی ایئر پورٹ کے شمال مغرب میں واقع ایک علاقے میں اتوار کو ایک راکٹ آکر گرا، جس میں ایک بچے کی موت ہوگئی۔ وہیں، ملک پر طالبان کے قبضے کے بعد امریکہ افغانستان سے لوگوں کو نکالنے کی مہم کو ختم کرنے کی سمت میں بڑھ رہا ہے۔

      دوسری جانب، امریکی محکمہ دفاع کے دفتر پینٹاگن نے پیر کو کہا کہ حامد کرزئی بین الاقوامی ہوائی اڈے کی طرف جارہے دھماکوں سے بھری گاڑی پر ڈرون حملے کے بعد کابل میں غیر فوجی شہریوں کے ہلاک ہونے کی خبروں سے امریکہ واقف ہے۔ امریکی سینٹرل کمان کے ترجمان کیپٹن بل اربن نے کہا، ’ہمیں آج کابل میں ایک گاڑی پر ہوئے ہوائی حملے میں غیر فوجی شہریوں کے مارے جانے کی اطلاع ہے۔ ہم اس ہوائی حملے میں ہوئے نقصان کا اب بھی اندازہ کر رہے ہیں...‘۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: