உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    طالبان حکومت کی تقریب حلف برداری منسوخ، عبوری حکومت میں غیر طالبان کو بھی شامل کئے جانے کا امکان: طالبان

    طالبان حکومت کی تقریب حلف برداری منسوخ، عبوری حکومت میں غیر طالبان کو بھی شامل کئے جانے کا امکان: طالبان

    طالبان حکومت کی تقریب حلف برداری منسوخ، عبوری حکومت میں غیر طالبان کو بھی شامل کئے جانے کا امکان: طالبان

    طالبان کے ترجمان سہیل شاہین نے کابینہ کی تقریب حلف برداری منسوخ کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ11 ستمبر کو طالبان کی عبوری کابینہ کی حلف برداری کی تقریب اب پلان کا حصہ نہیں ہے۔’ساتھ ہی ا فغان طالبان نے اشارہ دیا ہے کہ افغانستان کی عبوری حکومت میں غیرطالبان اراکین کو بھی شامل کیے جانے کا امکان ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      دوحہ: طالبان کے ترجمان سہیل شاہین نے کابینہ کی تقریب حلف برداری منسوخ کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ11 ستمبر کو طالبان کی عبوری کابینہ کی حلف برداری کی تقریب اب پلان کا حصہ نہیں ہے۔’ساتھ ہی ا فغان طالبان نے اشارہ دیا ہے کہ افغانستان کی عبوری حکومت میں غیرطالبان اراکین کو بھی شامل کیے جانے کا امکان ہے۔
      جیو نیوز کے مطابق انہوں نے کہاکہ پہلے پروگرام میں تھا کہ ہم حلف برداری کی تقریب رکھیں گے، اس کے لیے ضروری تھا کہ دوسرے ممالک سے وفد مدعو کیے جائیں جب کہ پروٹوکول کے انتظامات اور عوام کے لیے سروسز کی ضرورت تھی۔ انہوں نے کہا کہ لیڈر شپ نے فیصلہ کیا ہے کہ فوری طور پر وزراء کا اعلان کیا جائے کیوں کہ عبوری کابینہ کا اعلان ہوچکا لہذا اب تقریب منسوخ ہوچکی ہے۔
      واضح رہے کہ اس سے قبل طالبان نے 11 ستمبر کو امریکہ پر ہونے والے حملوں کے 20 سال مکمل ہونے پر حلف برداری تقریب کا اعلان کیا تھا۔قبل ازیں روس نے طالبان کی عبوری حکومت کی تقریب حلف برداری میں شرکت نہ کرنے کا اعلان کیا تھا۔ خیال رہے کہ طالبان کی جانب سے 7 ستمبر 2021 کو عبوری حکومت کا اعلان کیا گیا تھا جس میں ملا محمد حسن اخوند کو افغانستان کا وزیراعظم جبکہ ملا عبدالغنی برادر اور مولوی عبدالسلام حنفی کو نائب وزرائے اعظم مقرر کیا گیا تھا۔
      افغان طالبان کے ترجمان سہیل شاہین نے کہا ہے کہ افغان عبوری حکومت میں غیرطالبان اراکین کو بھی شامل کیا جاسکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ طالبان کی متعدد افغان رہنماؤں سے بات چیت جاری ہے، غیر طالبان اراکین کو اعلیٰ ترین عہدوں پر تعیناتی کا موقع مل سکتا ہے۔ سہیل شاہین نے کہا کہ رواں ماہ یا اگلے ماہ افغانستان میں باضابطہ حکومت کا اعلان کیا جا سکتا ہے۔اس کے علاوہ انہوں نے کہاکہ معاملات طے پانے کے بعد چین سمیت دیگر ممالک سے اعلیٰ سطح کے وفود کو دعوت دی جائے گی۔

      Published by:Nisar Ahmad
      First published: