உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    افغانستان کے کپسا میں طالبان کو زبردست نقصان، اسلامک گروپ کے کئی جنگجو جوابی حملے میں ہلاک

    Taliban in Afghanistan: افغانستان میں اسلامک امارات بنانے کو لے کر طالبان کے گروپوں کے درمیان ابھی بھی الجھن کی صورتحال بنی ہوئی ہے۔

    Taliban in Afghanistan: افغانستان میں اسلامک امارات بنانے کو لے کر طالبان کے گروپوں کے درمیان ابھی بھی الجھن کی صورتحال بنی ہوئی ہے۔

    Taliban in Afghanistan: افغانستان میں اسلامک امارات بنانے کو لے کر طالبان کے گروپوں کے درمیان ابھی بھی الجھن کی صورتحال بنی ہوئی ہے۔

    • Share this:

      کابل: افغانستان کے کپسا صوبہ میں طالبان کو زبردست نقصان اٹھانا پڑا ہے کیونکہ ملک کے سابق نائب صدر امراللہ صالح کی قیادت میں مزاحمتی فورس نے باغی گروپ کو منہ توڑ جواب دیا۔ کپسا صوبہ کے سنجن اور بغلان کے کھوست اور فیرنگ ضلع میں طالبان اور مزاحمتی اہلکاروں کے درمیان جھڑپیں ہو رہی ہیں۔ طالبان کے کئی جنگجووں کے مارے جانے کی خبر ہے، لیکن اس کی آفیشیل تصدیق ہونی ابھی باقی ہے۔


      اس درمیان، مزاحمتی فورس طالبان کو پنجشیر صوبہ میں ٹکر دے رہے ہیں، جس سے سنی پشتون گروپ پیچھے ہٹنے کے لئے مجبور ہوگیا ہے۔ پنجشیر میں طالبان کے ذریعہ جنگ بندی کی خلاف ورزی کرنے کے بعد یہ جوابی حملہ کیا گیا۔


      پنجشیر واحد ایسا صوبہ ہے، جس پر طالبان کا قبضہ نہیں ہے۔ طالبان نے اس ماہ کے وسط میں امریکی اہلکاروں کی واپسی کے پیش نظر افغانستان میں اقتدار پر قبضہ کرلیا تھا۔ طالبان کے خلاف مزاحمتی فورس کا جوابی حملہ دہشت گرد گروپ اسلامک اسٹیٹ (آئی ایس آئی ایس) کے ذریعہ کابل ایئرپورٹ کے پاس کئے گئے دھماکوں کے کچھ دنوں بعد ہوا ہے، جس میں 150 سے زیادہ لوگ اور 13 امریکی فوجی مارے گئے تھے۔


      حملوں کے بعد امراللہ صالح نے دنیا سے دہشت گردی کے خلاف متحد ہونے کو کہا۔ انہوں نے جمعہ ٹوئٹ کیا، ’دنیا کو دہشت گردی کے آگے جھکنا نہیں چاہئے۔ آئیے کابل ایئرپورٹ کو انسانیت کی توہین اور ’قوانین کی بنیاد پر ورلڈ آرڈر‘ کی جگہ نہ بننے دیں۔ آئیے ہماری اجتماعی کوشش اور توانائی پر یقین کریں۔ دہشت گردوں کے مقابلے شکست خوردہ ذہنیت آپ کو زیادہ خطرے میں ڈال دیتی ہے۔ نفسیاتی طور پر نہ مرو۔‘


      امراللہ صالح نے اسلامک اسٹیٹ سے خود کو دور کرنے کے لئے طالبان کو بھی نشانے پر لیا۔ امراللہ صالح نے کہا کہ طالبان نے اپنے مالک پاکستان سے آئی ایس آئی ایس کے ساتھ اپنے تعلقات سے انکار کرنا سیکھا ہے۔


      افغانستان میں اسلامک امارات بنانے کو لے کر طالبان کے گروپوں کے درمیان ابھی بھی  الجھن کی صورتحال برقرار ہے۔ افغانستان کی رپورٹوں کے مطابق، حقانی نیٹ ورک نے دہشت گردانہ گروپ کے سربراہ اور طالبان کے نائب لیڈر سراج الدین حقانی کے بھائی انس حقانی کی قیادت میں کابل پر کنٹرول کرلیا ہے۔ کہا جاتا ہے کہ سراج الدین حقانی کوئٹہ سے احکامات دے رہا تھا۔

      Published by:Nisar Ahmad
      First published: