உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    طالبان نے مار گرایا ایران کا ملٹری ڈرون، ہندوستان کے دیئے ہیلی کاپٹر پر بھی قبضہ

    سوشل میڈیا (Social Media) میں وائرل ہو رہی تصاویر میں دیکھا جاسکتا ہے کہ طالبان کے جنگجو (Taliban Fighters) ایران کے ملٹری ڈرون (Military Drone) کے ملبے کے برابر میں کھڑے ہیں۔ وہیں کچھ اور تصاویر میں طالبان کے جنگجو (Taliban  Fighters) ڈرون کو ایک گاڑی میں رکھ کر کہیں دوسری جگہ لے جاتے ہوئے دکھائی دے رہے ہیں۔ ایسا کہا جا رہا ہے کہ ایران کا یہ ڈرون مغربی صوبے فراہ میں افغانی فضائی سرحد کے اندر اڑ رہا تھا۔

    سوشل میڈیا (Social Media) میں وائرل ہو رہی تصاویر میں دیکھا جاسکتا ہے کہ طالبان کے جنگجو (Taliban Fighters) ایران کے ملٹری ڈرون (Military Drone) کے ملبے کے برابر میں کھڑے ہیں۔ وہیں کچھ اور تصاویر میں طالبان کے جنگجو (Taliban Fighters) ڈرون کو ایک گاڑی میں رکھ کر کہیں دوسری جگہ لے جاتے ہوئے دکھائی دے رہے ہیں۔ ایسا کہا جا رہا ہے کہ ایران کا یہ ڈرون مغربی صوبے فراہ میں افغانی فضائی سرحد کے اندر اڑ رہا تھا۔

    سوشل میڈیا (Social Media) میں وائرل ہو رہی تصاویر میں دیکھا جاسکتا ہے کہ طالبان کے جنگجو (Taliban Fighters) ایران کے ملٹری ڈرون (Military Drone) کے ملبے کے برابر میں کھڑے ہیں۔ وہیں کچھ اور تصاویر میں طالبان کے جنگجو (Taliban Fighters) ڈرون کو ایک گاڑی میں رکھ کر کہیں دوسری جگہ لے جاتے ہوئے دکھائی دے رہے ہیں۔ ایسا کہا جا رہا ہے کہ ایران کا یہ ڈرون مغربی صوبے فراہ میں افغانی فضائی سرحد کے اندر اڑ رہا تھا۔

    • Share this:
      کابل: افغانستان (Afghanistan) میں طالبان (Taliban) کی پکڑ ہر روز مزید مضبوط ہوتی جارہی ہے۔ طالبان جہاں افغانستان کے سبھی ریاستوں پر اپنا قبضہ جما رہا ہے، وہیں اب اس نے افغانستان کے فوجی ہوائی اڈوں پر بھی قبضہ جمانا شروع کر دیا ہے۔ اس درمیان طالبان نے اب ایران کے ایک ملٹری ڈرون کو مار گرانے کا دعویٰ کیا ہے۔ سوشل میڈیا (Social Media) میں وائرل ہو رہی تصاویر میں دیکھا جاسکتا ہے کہ طالبان کے جنگجو (Taliban Fighters) ایران کے ملٹری ڈرون (Military Drone) کے ملبے کے برابر میں کھڑے ہیں۔ وہیں کچھ اور تصاویر میں طالبان کے جنگجو (Taliban  Fighters) ڈرون کو ایک گاڑی میں رکھ کر کہیں دوسری جگہ لے جاتے ہوئے دکھائی دے رہے ہیں۔ ایسا کہا جا رہا ہے کہ ایران کا یہ ڈرون مغربی صوبے فراہ میں افغانی فضائی سرحد کے اندر اڑ رہا تھا۔

      طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد کے مطابق، ہمارے جنگجووں نے ایران سے متصل سرحدی علاقے میں ایک ایرانی ڈرون کو مار گرایا ہے۔ ہم اس بات کی جانچ کر رہے ہیں کہ ایرانی ڈرون افغانستان کے ہوائی علاقے میں گھس کیسے آیا۔ واضح رہے کہ طالبان کے جنگجووں نے جس ایران ٹوہی ڈرون کو مار گرایا ہے، اس کا نام موحضر-2 این (Mohajer-2N) ہے۔ واضح رہے کہ افغانستان اور ایران کی سرحد متصل ہے۔ یہی وجہ ہے کہ جب سے افغانستان میں طالبان کا حملہ تیز ہوا ہے، ایران نے بھی اپنے سرحد پر چوکسی بڑھا دی ہے۔

      Afghanistan, Taliban, Iran, Military Drone, India, Indian Helicopter, Taliban Fighters
      طالبان کے جنگجووں نے دو پہلے ہندوستان کی طرف سے افغان فضائیہ کو دیئے گئے ایم آئی-24 وی ہیلی کاپٹر کو ضبط کرلیا تھا۔ (تصویر کریڈٹ: @AfrozJournalis)


      واضح رہے کہ دو دن پہلے ہی طالبان نے قندوز ہوائی اڈے پر قبضہ کرتے ہوئے ہندوستان کی طرف سے افغان فضائیہ کو دیئے گئے ایم آئی-24 وی ہیلی کاپٹر کو ضبط کرلیا تھا۔ اس ہیلی کاپٹر کا سیریل نمبر 123 بتایا جا رہا ہے۔ قابل ذکر ہے کہ ہندوستان نے اس ہیلی کاپٹر کو ہندوستان نے افغان فضائیہ کو بطور تحفہ دیا تھا۔ رپورٹ کے مطابق، افغان فوج کو جب اس بات کی اطلاع ہوئی کہ طالبان کبھی بھی قندوز ہوائی اڈے پر قبضہ کرسکتا ہے تو اس نے ہیلی کاپٹر سے انجن سمیت سبھی ضروری سامان نکال لئے۔ ایسے میں یہ ہیلی کاپٹر اڑنے کی پوزیشن میں نہیں ہے۔

      طالبان اب تک 34 صوبائی دارالحکومتوں پر کرچکا ہے قبضہ

      افغانستان میں طالبان کی توسیع کے سبب صورتحال سنگین ہوتی جارہی ہے۔ گزشتہ جمعہ کو بھی طالبان کے جنگجووں نے اہم شہر لشکر گاہ سمیت چار صوبائی دارالحکومتوں پر قبضہ کرلیا۔ کچھ رپورٹس کے مطابق، باغیوں نے ملک کی 34 صوبائی دارالحکومتوں کو حال ہی میں اپنے قبضے میں لے لیا ہے۔ حالانکہ ابھی سب سے بڑا سوال ملک کی راجدھانی کابل کو لے کر ہے۔ کچھ ہی وقت پہلے امریکہ کے خفیہ محکمہ نے خدشہ ظاہر کیا تھا کہ 90 دنوں کے اندر کابل مکمل طور پر باغیوں کے قبضے میں آسکتا ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: