ہوم » نیوز » عالمی منظر

مولانا فضل الرحمن کےآگے جھکےعمران خان، استعفیٰ کوچھوڑکر تمام مطالبات ماننےکو تیار

ایکسپریس ٹربیون نے پاکستانی وزیراعظم عمران خان کے حوالےسےکہا 'حکومت استعفیٰ کو پیچھے چھوڑکرسبھی جائزمطالبات ماننےکوتیارہے'۔

  • Share this:
مولانا فضل الرحمن کےآگے جھکےعمران خان، استعفیٰ کوچھوڑکر تمام مطالبات ماننےکو تیار
مولانا فضل الرحمن کے سامنے پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان جھک گئے۔

اسلام آباد: پاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے منگل کو کہا کہ وہ اپنے استعفیٰ کوچھوڑکر 'آزادی مارچ' میں شامل مظاہرین کے تمام جائز مطالبات ماننے کوتیارہیں۔ آزادی مارچ کی قیادت تیزطرارمولانا فضل الرحمن کررہے ہیں۔ پاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے مبینہ طورپریہ بات وزیردفاع پرویزکی قیادت والی ٹیم کی میٹنگ میں کہی، جسے اسلام آباد میں مظاہرین سے تبادلہ خیال کرنے کی ذمہ داری دی گئی ہے۔


تمام مطالبات کو تیارہوئے عمران خان


ایکسپریس ٹربیون نے پاکستانی وزیراعظم عمران خان کے حوالے سے کہا 'حکومت استعفیٰ کوپیچھے چھوڑکرسبھی جائزمطالبات ماننے کوتیارہے'۔ اس سے قبل سابق وزیراعظم چودھری شجاعت حسین کی قیادت میں ایک وفد نے پیررات فضل الرحمن سے ملاقات کی۔ اس سےکچھ ہی گھنٹے پہلے وزیردفاع پرویز کی قیادت میں ایک وفد نے جے یوآئی - ایف لیڈراکرم خان درانی کی قیادت والی رہبرکمیٹی کے ساتھ ملاقات کرکے ان کا مطالبے پرتبادلہ خیال کیا۔


پاکستان کی بیشتراپوزیشن جماعتیں 'آزادی مارچ' میں شامل

مولانا فضل الرحمن وزیراعظم عمران خان کواقتدارسے ہٹانے کی پرزورکوشش میں مصروف ہیں۔ ایسے میں پاکستانی وزیراعظم عمران خان بیک فٹ پرنظرآرہے ہیں اوریہی وجہ ہے کہ وہ مولانا فضل الرحمن کی زیادہ ترمطالبات ماننے کوتیارہوگئے ہیں۔ ویسے توپاکستان کے زیادتراپوزیشن جماعتیں اس آزادی مارچ میں شامل ہیں۔ لیکن پاکستان کے دوبڑی اپوزیشن جماعتیں مسلم لیگ - نواز (پی ایم ایل- این) اورپاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) نے بھی اس حکومت مخالفت احتجاجی مظاہرے کو حمایت دی ہے۔
First published: Nov 05, 2019 10:10 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading