உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Exclusive: دہشت گردی کے خلاف کریک ڈاؤن جاری، اسلامک اسٹیٹ کے ڈیجیٹل واریئرز کی 7 ریاستوں میں تلاشی

    اعلیٰ انٹیلی جنس ذرائع کے مطابق یہ افراد کچھ عرصے سے ایجنسیوں کے ریڈار پر تھے۔

    اعلیٰ انٹیلی جنس ذرائع کے مطابق یہ افراد کچھ عرصے سے ایجنسیوں کے ریڈار پر تھے۔

    سی این این نیوز 18 نے منگل کے روز اطلاع دی تھی کہ تامل ناڈو پولیس نے ایروڈ میں مقیم اسلامک اسٹیٹ کے ہمدرد آصف مستین اور اس کے ساتھی یاسر نواب جان کو گرفتار کیا اور ان کے قبضے سے ایک چاقو، ایک سیاہ آئی ایس کا جھنڈا، مجرمانہ دستاویزات اور ڈیجیٹل میڈیا ڈیوائسز برآمد کیں۔

    • Share this:
      دہشت گردی کے خلاف اپنے کریک ڈاؤن کو جاری رکھتے ہوئے اتوار کی صبح سات ریاستوں میں اسلامک اسٹیٹ (IS) کے حامی کیڈر کے خلاف تلاشی کارروائیاں کی گئیں۔ یہ کارروائی مرکزی انٹیلی جنس ایجنسیوں کی طرف سے فراہم کردہ معلومات پر مبنی تھی۔

      ذرائع کے مطابق ضبط کیے گئے ڈیجیٹل میڈیا سے پوچھ گچھ اور فرانزک جانچ جاری ہے۔ ان کی شناخت ایجنسی نے سائبر اسپیس میں داعش کی حامی سرگرمیوں کے لیے کی تھی۔ ابتدائی انکشافات سے پتہ چلتا ہے کہ ان میں سے کچھ مواد کی تخلیق کے ساتھ ساتھ ہندوستان پر مبنی آئی ایس میگزین ’وائس آف ہند‘ کے پرچار میں بھی سرگرم تھے۔

      ہفتہ کو کیا ہوا؟

      دہشت گرد گروپ کے خطرے سے نمٹنے کے لیے مرکزی انٹیلی جنس ایجنسیوں کے مربوط آپریشن کے ایک حصے کے طور پر ہفتے کے روز آئی ایس کے حامیوں اور کیڈر کے خلاف ملک گیر چھاپے مارے گئے۔ مہاراشٹر، اتر پردیش، تلنگانہ، جھارکھنڈ، تامل ناڈو، کیرالہ، مدھیہ پردیش، مغربی بنگال، گجرات اور راجستھان میں 25 سے زیادہ اسلامک اسٹیٹ کے حامی افراد کو حراست میں لیا گیا۔

      پہ بھی پڑھیں: 

      جموں وکشمیر: ہندوستانی فضائیہ کے شہید افسرکی آخری رسومات ادا، نم آنکھوں سے دی گئی وداعی

      ذرائع نے بتایا کہ حراست میں لیے گئے افراد آئی ایس کی طرف جھکاؤ اور پرتشدد کارروائی کی تیاریوں کے لیے نوٹس میں آئے۔

      یہ بھی پڑھیں: 

      Commonwealth Games 2022: ہندوستانی خواتین کرکٹ ٹیم پاکستان کو شکست دینے اترے گی

      سی این این نیوز 18 نے منگل کے روز اطلاع دی تھی کہ تامل ناڈو پولیس نے ایروڈ میں مقیم اسلامک اسٹیٹ کے ہمدرد آصف مستین اور اس کے ساتھی یاسر نواب جان کو گرفتار کیا اور ان کے قبضے سے ایک چاقو، ایک سیاہ آئی ایس کا جھنڈا، مجرمانہ دستاویزات اور ڈیجیٹل میڈیا ڈیوائسز برآمد کیں۔ اعلیٰ انٹیلی جنس ذرائع کے مطابق یہ افراد کچھ عرصے سے ایجنسیوں کے ریڈار پر تھے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: