اپنا ضلع منتخب کریں۔

    آئی ایس آئی ایس سرغنہ ابو حسن کی موت، دہشت گرد تنظیم کے ترجمان نے آڈیو میسیج میں بتایا نئے لیڈر کا نام

    آئی ایس آئی ایس سرغنہ ابو حسن کی موت، دہشت گرد تنظیم کے ترجمان نے آڈیو میسیج میں بتایا نئے لیڈر کا نام ۔ علامتی تصویر ۔

    آئی ایس آئی ایس سرغنہ ابو حسن کی موت، دہشت گرد تنظیم کے ترجمان نے آڈیو میسیج میں بتایا نئے لیڈر کا نام ۔ علامتی تصویر ۔

    ISIS Leader Killed : دہشت گرد تنظیم اسلامک اسٹیٹ کے سرغنہ ابو الحسن الہاشمی القریشی حال میں ہی لڑائی میں مارا گیا ہے ۔ یہ جانکاری تنظیم کے ترجمان نے بدھ کو جاری ایک آڈیو میں دی ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Syria
    • Share this:
      بیروت ، لبنان: دہشت گرد تنظیم اسلامک اسٹیٹ کے سرغنہ ابو الحسن الہاشمی القریشی حال میں ہی لڑائی میں مارا گیا ہے ۔ یہ جانکاری تنظیم کے ترجمان نے بدھ کو جاری ایک آڈیو میں دی ۔ القریشی کے بارے میں کم ہی جانکاری ہے ، جس نے فروری میں شمال مغربی شام میں امریکہ کے ایک حملے میں ابو ابراہیم الہاشمی القریشی کی موت کے بعد کام کاج سنبھالا تھا ۔ القریشی اس سال مارا جانے والا اس تنظیم کا دوسرا لیڈر ہے اور یہ اس تنظیم کیلئے ایک بڑا جھٹکا ہے ۔ کسی نے اس کی موت کی ذمہ داری نہیں لی ہے ۔

      آئی ایس ترجمان ابو عمر المظاہر نے یہ اعلان ایسے وقت میں کیا ہے جب آئی ایس شام اور عراق کے حصوں میں خطرناک حملوں کو انجام دینے کی کوشش میں ہے ۔ المظاہر نے کہا کہ ابو الحسین الحسینی القریشی کو تنظیم کا نیا لیڈر بنایا گیا ہے ۔ آئی ایس بانی ابوبکر البغدادی اکتوبر 2019 میں شمال مغرب میں ایک حملے میں مارا گیا تھا ۔

      یہ بھی پڑھئے: پی ایف آئی پر جاری رہے گی پابندی، ہائی کورٹ نے خارج کی فیصلہ کو چیلنج کرنے والی عرضی


      یہ بھی پڑھئے: وارانسی: شادی پروگرام کے دوران ڈانس کرتے کرتے ہوگئی موت، ڈاکٹر نے کہا: پوسٹ کووڈ افیکٹ


      سال 2017 میں آئی ایس آئی ایس عراق میں اور دو سال بعد شام میں ہار گیا ، لیکن اس تنظیم کے سلیپرسیل ابھی بھی دونوں ممالک میں حملے کرتے رہتے ہیں اور دنیا کے دیگر ممالک میں بھی حملے کا دعوی کرتے رہتے ہیں ۔ آئی ایس کے پچھلے لیڈر ابوابراہیم القریشی اس سال کی شروعات میں شمالی کوریا کے عدلب صوبہ میں مارا گیا تھا ۔

      حال ہی میں ایک پروگرام کے دوران ہندوستان کے قومی سلامتی کے مشیر اجیت ڈوبھال نے سرحد پار اور آئی ایس آئی ایس سے ترغیب یافتہ دہشت گروں کے خطرہ بنے رہنے کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ ترقی پذیر خیالات سے شدت پسندی کا مقابلہ کرنے میں علما کا اہم کردار ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: