உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اسکول میں چل رہی کورونا پر بورڈ میٹنگ میں شخص نے اتار دئے کپڑے ، پھر جو ہوا جان کر رہ جائیں گے دنگ

    اسکول میں چل رہی کورونا پر بورڈ میٹنگ میں شخص نے اتار دئے کپڑے ، پھر جو ہوا جان کر رہ جائیں گے دنگ ۔ تصویر : Youtube

    اسکول میں چل رہی کورونا پر بورڈ میٹنگ میں شخص نے اتار دئے کپڑے ، پھر جو ہوا جان کر رہ جائیں گے دنگ ۔ تصویر : Youtube

    گزشتہ چھ اگست کو امریکہ کے ٹیکساس میں واقع ڈریپنگ اسپرنگس اسکول نے کورونا پروٹوکول کے قوانین میں ڈھیل دیتے ہوئے اسکول میں بچوں کے ماسک پہننے کے فیصلہ کو متبادل اعلان کردیا تھا ، جس پر کئی اہل خانہ کو اعتراض تھا ۔

    • Share this:
      کورونا کا قہر دنیا میں ابھی بھی برقرار ہے ۔ ویکسین کے باوجود کئی ممالک نے ماسک پہننا ضروری قرار دے رکھا ہے ۔ ماسک پہننے کو لے کر لوگوں کی الگ الگ رائے ہے ۔ کئی لوگوں کا کہنا ہے کہ ماسک پہننا بے کار ہے جبکہ کئی لوگ ماسک پہننے کی حمایت کرتے ہیں ۔ حال ہی میں امریکہ کے ایک شخص نے ماسک پہننے کی حمایت کچھ اس طرح کی کہ وہ سوشل میڈیا پر وائرل ہوگیا ۔ اس شخص نے ماسک پہننے کے پروٹوکول کو بنائے رکھنے کیلئے لوگوں کے سامنے اپنے کپڑے اتار دئے اور صرف انڈرویئر میں کھڑا نظر آیا ۔

      گزشتہ چھ اگست کو امریکہ کے ٹیکساس میں واقع ڈریپنگ اسپرنگس اسکول نے کورونا پروٹوکول کے قوانین میں ڈھیل دیتے ہوئے اسکول میں بچوں کے ماسک پہننے کے فیصلہ کو متبادل اعلان کردیا تھا ، جس پر کئی اہل خانہ کو اعتراض تھا ۔ 24 اگست کو اسکول میں ایک بورڈ میٹنگ بلائی گئی ، جس میں اسکول انتظامیہ کے علاوہ اہل خانہ بھی شامل ہوئے ۔


      میٹنگ میں اسکول میں کورونا پروٹوکول سے وابستہ معاملات پر بات چیت ہوئی ۔ میٹنگ میں اہل خانہ کو ڈیڑھ منٹ کا وقت بولنے کیلئے دیا گیا ۔ ایک ہائی اسکول کے طالب علم کے والد جیمس ایکرس کی جب باری آئی تو وہ بھی بولنے کیلئے کھڑے ہوئے ، مگر بولتے بولتے وہ اپنے کپڑے اتارنے لگے اور کچھ ہی دیر میں وہ صرف انڈرویئر پہنے دکھ رہے تھے ۔ انہوں نے ایسا اس لئے کیا کیونکہ وہ اپنی بات کا ایک پوائنٹ ثابٹ کرنا چاہتے تھے ۔

      دراصل جیمس کا کہنا تھا کہ ماسک پہننا ضروری ہے اور کچھ ضوابط ایسے ہوتے ہیں جو ہمیں بھلے ہی پسند نہ ہوں ، مگر ہمیں انہیں فالو کرنا پڑتا ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: