உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Israel’s attacks on Gaza: سال 2005 سے غزہ پر اسرائیل کے حملے کب کب ہوئے؟ جانیے ٹائم لائن

    دسمبر 2008 میں اسرائیل نے غزہ میں 22 روزہ فوجی کارروائی کا آغاز کیا تھا

    دسمبر 2008 میں اسرائیل نے غزہ میں 22 روزہ فوجی کارروائی کا آغاز کیا تھا

    مئی 2021 میں رمضان کے مقدس مہینے کے دوران ہفتوں کی کشیدگی کے بعد یروشلم (Jerusalem) میں مسجد اقصیٰ (Al-Aqsa Mosque) کے احاطے میں اسرائیلی سیکیورٹی فورسز کے ہاتھوں سینکڑوں فلسطینی زخمی ہوئے۔ حماس نے اسرائیل سے سکیورٹی فورسز کو کمپاؤنڈ سے نکالنے کا مطالبہ کیا۔

    • Share this:
      فلسطین کے سب سے مشہور شہر غزہ پٹی (Gaza Strip) پر اسرائیلی فضائی حملوں کا سلسلہ جاری ہے اور یہ تشدد اتوار کے روز تیسرے دن میں داخل ہوگیا ہے۔ الجزیرہ کی ایک رپورٹ کے مطابق خواتین اور بچوں سمیت کم از کم 30 فلسطینی جاں بحق اور 200 سے زائد زخمی ہوئے ہیں۔

      یہ حملے مئی 2021 میں 11 روزہ جنگ کے بعد غزہ پر اسرائیل کے تازہ ترین حملے کی نشاندہی کرتا ہے جس میں سینکڑوں افراد ہلاک اور ہزاروں زخمی ہوئے تھے۔ مندرجہ ذیل ٹائم لائن میں 2005 کے بعد سے غزہ پر اسرائیلی افواج کے بڑے حملوں کی فہرست دی گئی ہے جب اس نے غزہ پٹی پر حملے کیے جو کہ 2.3 ملین افراد پر مشتمل ساحلی علاقہ ہے:

      اگست 2005 - اسرائیلی افواج نے غزہ پر مصر سے قبضہ کرنے کے 38 سال بعد بستیوں کو ترک کرکے اسے فلسطینی اتھارٹی کے کنٹرول میں چھوڑ دیا۔

      جنوری 2006 - ایک مسلح گروپ حماس (Hamas) نے فلسطینی قانون ساز انتخابات میں اکثریتی نشستیں جیت لیں۔


      جون 2006 - حماس نے غزہ سے سرحد پار چھاپے میں اسرائیلی فوج میں شامل گیلاد شالیت (Gilad Shalit) کو پکڑ لیا، جس سے اسرائیلی فضائی حملے اور دراندازی شروع ہوئی۔

      دسمبر 2008 - اسرائیل نے غزہ میں 22 روزہ فوجی کارروائی کا آغاز کیا جب جنوبی اسرائیلی قصبے سڈروٹ (Sderot) پر راکٹ داغے گئے۔ جنگ بندی پر اتفاق ہونے سے قبل تقریباً 1400 فلسطینی اور 13 اسرائیلی مارے گئے۔

      نومبر 2012 - اسرائیل نے حماس کے ملٹری چیف آف اسٹاف احمد جباری (Ahmad Jabari) کو قتل کر دیا، جس کے بعد فلسطین پر آٹھ دن تک اسرائیلی فضائی حملے ہوئے۔

      جولائی-اگست 2014 - حماس کے ہاتھوں تین اسرائیلی نوجوانوں کا اغوا اور قتل سات ہفتوں تک جاری رہنے والی جنگ کا باعث بنتا ہے جس میں غزہ میں 2,100 سے زیادہ فلسطینیوں کے ساتھ 73 اسرائیلیوں سمیت 67 فوجی مارے گئے۔

      مارچ 2018 - اسرائیل کے ساتھ غزہ کی باڑ والی سرحد پر فلسطینیوں کا احتجاج شروع ہوا اور اسرائیلی فوجیوں نے انہیں واپس کرنے کے لیے فائرنگ کی۔ حماس اور اسرائیلی فورسز کے درمیان کئی مہینوں سے جاری احتجاجی مظاہروں میں 170 سے زائد فلسطینی مارے گئے۔


      مئی 2021 - رمضان کے مقدس مہینے کے دوران ہفتوں کی کشیدگی کے بعد یروشلم (Jerusalem) میں مسجد اقصیٰ (Al-Aqsa Mosque) کے احاطے میں اسرائیلی سیکیورٹی فورسز کے ہاتھوں سینکڑوں فلسطینی زخمی ہوئے۔ حماس نے اسرائیل سے سکیورٹی فورسز کو کمپاؤنڈ سے نکالنے کا مطالبہ کیا۔

      یہ بھی پڑھیں: 

      Islamic Jihad: فلسطینی اسلامی جہاد کیا ہے؟ اسرائیل کیوں بنا رہا ہے اسے خاص نشانہ؟

      اس دوران اسرائیل نے غزہ پر فضائی حملے کیے جس کے جواب میں اس کا کہنا تھا کہ یہ راکٹ غزہ سے فائر کیے گئے تھے۔ 11 دن تک جاری رہنے والی لڑائی میں غزہ میں کم از کم 260 اور اسرائیل میں 13 افراد مارے گئے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      Israel bombs Gaza: ’یہ یوکرئن نہیں غزہ ہے‘ غزہ پر اسرائیلی بمباری سے فلسطینی عوام میں شدید بے چینی!

      اگست 2022 - اسرائیلی طیاروں کے نئے فضائی حملوں میں خواتین اور بچوں سمیت 30 سے ​​زائد فلسطینی مارے گئے۔ فلسطینی اسلامی جہاد (Palestinian Islamic Jihad) کے دو کمانڈر فضائی حملوں میں مارے گئے، اس کے جواب میں غزہ کی جانب سے اسرائیل پر درجنوں راکٹ داغے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: