ہوم » نیوز » عالمی منظر

افغانستان کی لڑکیوں نے کار پارٹس کے جگاڑ سے بنا دیا وینٹی لیٹر

افغانستان میں لڑکیوں کی اس ٹیم کو افغان ڈریمرس کے نام سے جانا جاتا ہے۔ یہ لڑکیاں مغربی صوبے کے ہیرات علاقے سے آتی ہیں۔ یہاں وائرس انفیکشن کا سب سے پہلا معاملہ درج ہوا تھا۔

  • Share this:
افغانستان کی لڑکیوں نے کار پارٹس کے جگاڑ سے بنا دیا وینٹی لیٹر
افغانستان کی لڑکیوں نے کار پارٹس کے جگاڑ سے بنا دیا وینٹی لیٹر

کابل۔ کورونا وائرس (Coronavirus) کو لے کر روز نئی جانکاری سامنے آ رہی ہے۔ اس ضمن میں افغانستان (Afghanistan) سے ایک دلچسپ خبر آئی ہے۔ یہاں کچھ لڑکیوں نے مل کر کار پارٹس (car parts)  کے جگاڑ سے وینٹی لیٹر بنا ڈالا ہے۔ یہ سبھی لڑکیاں روبوٹکس کی پڑھائی کر رہی ہیں اور ایک ٹیم کا حصہ ہیں۔ انہوں نے کار پارٹس کے ذریعہ کفایتی وینٹی لیٹر بنانے میں کامیابی حاصل کی ہے۔


بی بی سی کی ایک رپورٹ کے مطابق، ان لڑکیوں نے 2017 میں بھی سرخیاں بٹوری تھیں۔ اس وقت انہوں نے امریکہ میں ہوئے ایک مسابقے میں جیت حاصل کی تھی۔ عالمی مسابقے میں انہیں اسپیشل ایوارڈ دیا گیا تھا۔


اب ان لڑکیوں نے کار پارٹس سے وینٹی لیٹر بنانے کا کارنامہ کر دکھایا ہے۔ مئی کے آخر تک یہ لڑکیاں وینٹی لیٹر کی سپلائی شروع کر دیں گی۔ ان کی قیمت بھی بازار کی قیمت سے کم ہو گی۔


افغانستان میں وینٹی لیٹر کی کافی کمی ہے

افغانستان برسوں سے جنگ سے نبردآزما ہے۔ وہاں کی صحت صورت حال کافی خراب ہے۔ افغانستان میں تین کروڑ 89 لاکھ کی آبادی پر صرف 400 وینٹی لیٹرس ہیں۔ افغانستان میں کورونا وائرس کے اب تک 7,650 معاملے سامنے آ چکے ہیں۔ کورونا وائرس کے انفیکشن کے پیش نظر یہاں 178 لوگوں کی جان گئی ہے۔ حالانکہ کہا جا رہا ہے کہ صحیح اعداد وشمار اس سے کہیں زیادہ اور کئی گنا ہو سکتے ہیں۔

بی بی سی سے بات کرتے ہوئے لڑکیوں کی ٹیم کی ایک رکن ناہید رحمی نے بتایا کہ ہمارے لئے یہ بہت اہم بات ہے کہ اگر ہم اپنی کوششوں کی وجہ سے ایک بھی جان بچا پائیں۔ افغانستان میں لڑکیوں کی اس ٹیم کو افغان ڈریمرس کے نام سے جانا جاتا ہے۔ یہ لڑکیاں مغربی صوبے کے ہیرات علاقے سے آتی ہیں۔ یہاں وائرس انفیکشن کا سب سے پہلا معاملہ درج ہوا تھا۔

لڑکیوں کی ٹیم میں سبھی کی عمر 14 سے 17 سال کے درمیان ہے۔ انہوں نے ٹویوٹا کورولا کے موٹر اور ہونڈا موٹر سائیکل کے چین ڈرائیو کے ذریعہ وینٹی لیٹر کا پروٹوٹائپ بنایا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ ان کے وینٹی لیٹر کے ذریعہ سانس لینے میں تکلیف ہونے والے مریضوں کو عارضی راحت ملے گی، جب تک کہ معیاری وینٹی لیٹر دستیاب نہیں ہو جاتا۔
First published: May 21, 2020 09:34 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading