உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Israel bombs Gaza: ’یہ یوکرئن نہیں غزہ ہے‘ غزہ پر اسرائیلی بمباری سے فلسطینی عوام میں شدید بے چینی!

    Youtube Video

    فلسطینیوں نے بمباری کے جواب میں اسرائیل پر 400 سے زائد راکٹ داغے ہیں۔ اسرائیلی ایمبولینس سروس کے مطابق زیادہ تر راکٹوں کو روک لیا گیا تھا اور کوئی سنگین جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملی ہے۔

    • Share this:
      غزہ پٹی (Gaza Strip) میں فلسطینی مسلح گروپ کا ایک سینیئر کمانڈر اور کئی بچے مارے گئے ہیں جس میں اسرائیلی جیٹ طیاروں نے دوسرے روز بھی محصور غزہ پٹی پر بمباری کی ہے۔ اتوار کو ایک بیان میں اسلامی جہاد (Islamic Jihad) نے تصدیق کی کہ غزہ پٹی کے جنوب میں اس کے کمانڈر خالد منصور (Khaled Mansour) ہفتے کے روز اسرائیلی حملے میں مارے گئے تھے۔

      منصور اسلامی جہاد کا دوسرا اعلیٰ ترین رکن ہے جو اسرائیل کی جانب سے جمعہ کو غزہ پر حملہ شروع کرنے کے بعد سے مارا گیا ہے۔ اس سے قبل نھی اسرائیلی فوج نے شمال میں گروپ کے کمانڈر تیسر الجباری (Taysir al-Jabari) کو قتل کر دیا تھا۔ اسرائیل نے خبردار کیا ہے کہ اسلامی جہاد کے خلاف اس کی مہم ایک ہفتہ تک چل سکتی ہے اور غزہ پر اس کے حملوں سے اپارٹمنٹس کی عمارتیں تباہ ہو گئی ہیں اور پناہ گزین کیمپوں کو نشانہ بنایا گیا ہے۔

      غزہ کی پٹی پر حکومت کرنے والے گروپ حماس کے مطابق ہفتے کے روز جبالیہ پناہ گزین کیمپ کے قریب ایک دھماکے میں کم از کم چار بچے ہلاک ہو گئے۔ اس نے ہلاکتوں کے لیے اسرائیل کو ذمہ دار ٹھہرایا، لیکن فوج نے کسی بھی قسم کی ذمہ داری سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ دھماکہ اسلامی جہاد کی جانب سے داغے گئے ایک ناکام راکٹ کی وجہ سے ہوا۔

      خبر رساں ادارہ الجزیرہ ان دعوؤں کی فوری تصدیق نہیں کر سکا۔ تازہ ترین اموات سے جمعہ سے اب تک ہلاک ہونے والے بچوں کی تعداد چھ ہو گئی ہے اور فلسطینیوں کی کل تعداد 24 ہو گئی ہے۔ غزہ میں وزارت صحت کے مطابق کم از کم 204 دیگر زخمی بھی ہوئے ہیں۔

      فلسطینیوں نے بمباری کے جواب میں اسرائیل پر 400 سے زائد راکٹ داغے ہیں۔ اسرائیلی ایمبولینس سروس کے مطابق زیادہ تر راکٹوں کو روک لیا گیا تھا اور کوئی سنگین جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملی ہے۔ تشدد نے اسرائیل کی طرف سے غزہ پر ایک اور جنگ کا خدشہ پیدا کر دیا ہے، صرف 15 ماہ کے طویل تنازع کے بعد جس میں 260 سے زائد افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

      Covid-19: کورونا نے پھر بڑھائی تشویش، کیا آنے والی ہے نئی لہر؟ ماہرین نے کہی یہ بات

      #Israeli fighter jets destroyed a 5-storey house in the center of #Gaza City, after warning its residents to evacuate pic.twitter.com/FHY8ZwFNxG

      یہ بھی پڑھیں:

      Oil Prices: صارفین کیلئے خوشخبری! خوردنی تیل کی قیمتوں میں 10 سے 12 روپے تک کمی کا امکان! کیا ہے وجہ؟

      الجزیرہ کی یومنہ السید نے غزہ شہر سے رپورٹنگ کرتے ہوئے کہا کہ ایک سال بعد، تقریباً کوئی تعمیر نو نہیں ہو سکی ہے۔ یہ الگ تھلگ ساحلی علاقہ انتہائی غریب علاقہ ہے، اس کے لوگ بمشکل صحت یاب ہو رہے ہیں۔ اور بہت سے لوگوں کو مزید حملوں کا خدشہ ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: