ہوم » نیوز » عالمی منظر

حوثی تحریک کی جانب سے سعودی عرب کی سرحد پر جنگ بندی اورامن عام کی پیشکش

صنعاء۔ یمن کی مسلح حوثی موومنٹ کے ایک سینئر اہلکار نے سعودی عرب کی سرحدوں پر حملے بند کرنے اور حوثی مخالف یمنی جنگجوؤں کے لئے امن عام کی تجویز پیش کی، بشرطیکہ سعودی اتحاد فضائی حملے بند کردے اور یمن کی ناکہ بندی ختم کرے۔

  • UNI
  • Last Updated: Sep 26, 2016 09:38 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
حوثی تحریک کی جانب سے سعودی عرب کی سرحد پر جنگ بندی اورامن عام کی پیشکش
فائل فوٹو

صنعاء۔  یمن کی مسلح حوثی موومنٹ کے ایک سینئر اہلکار نے سعودی عرب کی سرحدوں پر حملے بند کرنے اور حوثی مخالف یمنی جنگجوؤں کے لئے امن عام کی تجویز پیش کی، بشرطیکہ سعودی اتحاد فضائی حملے بند کردے اور یمن کی ناکہ بندی ختم کرے۔ اگرچہ حوثیوں کی یہ پہل یمنی حکومت اور ان کے حامی عرب ممالک کے مطالبے کے عین مطابق نہيں ہے، تاہم، اس سے یمن میں گزشتہ 18 مہینے سے جاری خانہ جنگی بند ہونے کی کچھ امید ضرور پیدا ہوئی ہے، جس میں تقریبا 10 ہزار سے زیادہ لوگوں کی موت ہوئی ہے اور ملک کی معیشت تباہ ہوکر رہ گئی ہے۔


حوثیوں کی خود ساختہ سیاسی کونسل کے سربراہ نے اپنے ایک خطاب میں کہا کہ "یمن میں بری ، بحری اور فضائی راستے سے حملے بند کرنے اور ملک کی ناکہ بندی ختم کرنے کے عوض ہم سعودی سرحد پر حملے کی کارروائی بند کرنے کو تیار ہیں"۔ واضح رہے کہ زیدی شیعہ فرقہ سے تعلق رکھنے والے حوثی جنگجوؤں نے مارچ 2015 میں راجدھانی صنعاء پر قبضہ کرکے صدر عبد ربہ منصور ہادی کی حکومت کو اپنے آخری ٹھکانے عدن سے بھی بے دخل کردیا تھا۔ دریں اثناء، یمن میں آئینی حکومت کی حمایت کرنے والے عرب اتحاد کا کہنا ہے کہ یمن کے بحران کا حتمی سیاسی حل کسی عارضی جنگ بندی سے بہتر ہے۔ اطلاع کے مطابق یہ بات اتحاد کے ترجمان بریگیڈیئر جنرل احمد عسیری کی زبانی سامنے آئی۔ عرب اتحاد کے ترجمان جنرل عسیری نے حوثیوں کی پیشکش پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ عرب اتحاد ایسی کسی بھی پہل کا خیر مقدم کرتا ہے جس کا نتیجہ یمنی بحران کے کسی حقیقی سیاسی حل کی صورت میں سامنے آئے۔


ادھر یمن کی آئینی حکومت حوثی جنگجوؤں کو ہتھیار فراہم کرنے میں ایران کے ملوث ہونے کے حوالے سے سلامتی کونسل کے ساتھ خط و کتابت کی تیاری کر رہی ہے۔ حوثی باغیوں کی تشکیل شدہ نام نہاد سپریم سیاسی کونسل کے سربراہ صالح الصماد نے ایک منصوبہ پیش کیا ہے جس کے تحت سعودی سرحد پر حملے روک دینے کے عوض عرب اتحاد کے ٹھکانوں اور ان کے حامی یمنی جنگجوؤں پر حملوں کا سلسلہ موقوف کر دیا جائے گا۔ الصماد نے اپنے منصوبے پر عمل درآمد کے لیے اقوام متحدہ سے مدد طلب کی ہے۔

First published: Sep 26, 2016 09:38 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading