ہوم » نیوز » عالمی منظر

ترکی انتخابات: اپوزیشن کا سرکاری ٹی وی پر نتائج کے اعلان میں جانبداری کا الزام

انقرہ۔ صدر طیب اردوغان نے فتح کا اعلان کردیا جس کے بعد اپوزیشن پارٹیوں نے فوری طور پر شکست قبول کرنے سے انکار کردیا اور سرکاری ٹی وی پر نتائج کے اعلان میں جانبداری کا الزام لگا دیا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jun 25, 2018 11:54 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ترکی انتخابات: اپوزیشن کا سرکاری ٹی وی پر نتائج کے اعلان میں جانبداری کا الزام
ترکی کے یلووا میں چوبیس جون کو ایک پولنگ اسٹیشن پر ایک خاتون ترکی کے صدارتی اور پارلیمانی انتخابات کے لئے اپنا بیلٹ ڈالتے ہوئے۔ فوٹو، رائٹرز۔

انقرہ۔ صدر طیب اردوغان نے فتح کا اعلان کردیا جس کے بعد اپوزیشن پارٹیوں نے فوری طور پر شکست قبول کرنے سے انکار کردیا اور سرکاری ٹی وی پر نتائج کے اعلان میں جانبداری کا الزام لگا دیا ہے۔ رجب طیب اردگان نے ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عوام نے مجھے صدارت کے لیے مینڈیٹ دے دیا ہے، عدلیہ پر اعتبار بڑھانے کے لیے اقدامات جاری رہیں گے، امید ہے انتخابی نتائج پر انگلی اٹھا کر جمہوریت کو نقصان نہیں پہنچایاجائےگا۔


انہوں نے کہا کہ اب وقت آ گیا ہے کہ انتخابی کشیدگی کو بھلا کر ملک کے مستقبل پر توجہ دیں۔ ہم انسانی حقوق اور شہری آزادی یقینی بنانے کےلیے پرعزم ہیں، دہشت گرد تنظیموں کو استعمال کرکے ترکی کو ڈرانے والوں کا مقابلہ کرتے رہیں گے، جمہوریت اور معیشت کی بہتری کا سفر جاری رکھیں گے۔


 بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق ترکی کی تاریخ میں پہلی مرتبہ صدارتی اور پارلیمانی انتخابات ایک ساتھ منعقد ہوئے۔ ووٹرز کی تعداد 5 کروڑ 63 لاکھ 22 ہزار 632 تھی جب کہ ساڑھے 30 لاکھ بیرون ملک مقیم شہریوں نے بھی ووٹ ڈالے۔


First published: Jun 25, 2018 11:54 AM IST