உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Montenegro Mass Shooting:مونٹی نیگرو میں خاندانی جھگڑے کے بعد اندھادھند فائرنگ میں 12 لوگوں کی موت،6زخمی

    مونٹی نیگرو میں اندھا دھند فائرنگ کا واقعہ۔ (علامتی تصویر)

    مونٹی نیگرو میں اندھا دھند فائرنگ کا واقعہ۔ (علامتی تصویر)

    Montenegro Mass Shooting: سیٹنجے کے رہائشی میلوراڈ میترووک نے مقامی میڈیا کو بتایا کہ میں یقین نہیں کر سکتا کہ یہ سیٹنجے اور مونٹی نیگرو میں ہوا ہے۔

    • Share this:
      Montenegro Mass Shooting: مونٹی نیگرو میں جمعہ کو اندھا دھند فائرنگ کا واقعہ سامنے آیا ہے۔ یہاں کی مقامی میڈیا رپورٹس کے مطابق ایک بندوق بردار سمیت 12 افراد ہلاک جبکہ 6 زخمی ہوئے۔ مونٹی نیگرو کے مغربی شہر سیٹینجے میں جائے وقوعہ پر موجود پولیس نے واقعے پر مزید تفصیلات اور تبصرہ کرنے سے انکار کر دیا۔

      میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ سیٹنجے سے تعلق رکھنے والے ایک شخص نے خاندانی تنازعہ کے بعد سڑک کے لوگوں بشمول بچوں پر فائرنگ کر دی جس سے 12 افراد ہلاک اور چھ زخمی ہو گئے۔ تاہم حملہ آور بعد میں پولیس کی گولیوں سے مارا گیا۔

      مقام واردات کو پولیس نے کیا بند
      اطلاعات کے مطابق زخمیوں میں ایک پولیس اہلکار بھی شامل ہے۔ پولیس نے ابھی تک حملے کے بارے میں کوئی سرکاری بیان جاری نہیں کیا ہے لیکن جائے وقوعہ کو گھیرے میں لے لیا ہے۔ یہ بھی بتایا گیا ہے کہ چار زخمیوں کو علاج کے لیے سیٹنجے کے ایک اسپتال میں بھیجا گیا ہے۔ جبکہ دو دیگر شدید زخمیوں کو دارالحکومت پوڈگوریکا کے ایک اسپتال میں بھیجا گیا ہے۔

      سنسنی خیز واردات سے شہریوں میں صدمہ
      مونٹی نیگرو کے وزیر اعظم ڈریٹن اباجووک نے اپنے ٹیلیگرام چینل پر لکھا کہ سیٹنجے میں ہونے والے ایک سنسنی خیز واقعے سے شہر کے لوگ صدمے میں ہیں۔ انہوں نے سیٹنجے کے تمام لوگوں سے معصوم متاثرین کے خاندانوں، ان کے رشتہ داروں اور دوستوں کے ساتھ رہنے کی بھی اپیل کی۔ اس کے علاوہ ملک میں تین روزہ سوگ کا بھی اعلان کیا گیا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      Salman Rushdieپر ہوئے حملے کو سورا بھاسکر نے بتایا’شرمناک‘اور’قابل مذمت‘، کیا یہ ٹوئٹ

      یہ بھی پڑھیں:
      چاقو کے وار سے زخمی رشدی کی بچ گئی جان لیکن جاسکتی ہے ایک آنکھ،حملہ آورکی ہوئی شناخت

      سیٹنجے کے رہائشی میلوراڈ میترووک نے مقامی میڈیا کو بتایا کہ میں یقین نہیں کر سکتا کہ یہ سیٹنجے اور مونٹی نیگرو میں ہوا ہے۔ مجھے نہیں معلوم کہ میں کیا کہوں، میں بے آواز ہوں۔ مجھے نہیں معلوم کہ یہ ہمیں کہاں لے جا سکتا ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: