உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پاکستان جاکر پڑھائی نہ کریں ہندوستانی طلبا، ورنہ ... UGC اور AICTE نے جاری کی وارننگ

    Warning for Indian Students: پاکستان کے تعلیمی اداروں کو لے کر یونیورسٹی گرانٹس کمیشن (Pakistan Educational Institutions) یعنی UGC اور ہندوستان میں تکنیکی تعلیم کو بڑھاوا دینے والے AICTE نے وارننگ جاری کی ہے۔ ہندوستانی طلبا کے لئے جاری کئے گئے اس مشترکہ مشاورت میں کہا گیا ہے کہ ہندوستانی طلبا پاکستان کے کسی بھی کالج یا تعلیمی اداروں میں داخلہ نہ لیں۔ کیونکہ پاکستان سے پڑھ کر آنے والے طلبا ہندوستان میں نوکری اور اعلیٰ تعلیم حاصل کرنے کے اہل نہیں ہوں گے۔

    Warning for Indian Students: پاکستان کے تعلیمی اداروں کو لے کر یونیورسٹی گرانٹس کمیشن (Pakistan Educational Institutions) یعنی UGC اور ہندوستان میں تکنیکی تعلیم کو بڑھاوا دینے والے AICTE نے وارننگ جاری کی ہے۔ ہندوستانی طلبا کے لئے جاری کئے گئے اس مشترکہ مشاورت میں کہا گیا ہے کہ ہندوستانی طلبا پاکستان کے کسی بھی کالج یا تعلیمی اداروں میں داخلہ نہ لیں۔ کیونکہ پاکستان سے پڑھ کر آنے والے طلبا ہندوستان میں نوکری اور اعلیٰ تعلیم حاصل کرنے کے اہل نہیں ہوں گے۔

    Warning for Indian Students: پاکستان کے تعلیمی اداروں کو لے کر یونیورسٹی گرانٹس کمیشن (Pakistan Educational Institutions) یعنی UGC اور ہندوستان میں تکنیکی تعلیم کو بڑھاوا دینے والے AICTE نے وارننگ جاری کی ہے۔ ہندوستانی طلبا کے لئے جاری کئے گئے اس مشترکہ مشاورت میں کہا گیا ہے کہ ہندوستانی طلبا پاکستان کے کسی بھی کالج یا تعلیمی اداروں میں داخلہ نہ لیں۔ کیونکہ پاکستان سے پڑھ کر آنے والے طلبا ہندوستان میں نوکری اور اعلیٰ تعلیم حاصل کرنے کے اہل نہیں ہوں گے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: یونیورسٹی گرانٹ کمیشن یعنی UGC اور ہندوستان میں تکنیکی تعلیم کو فروغ دینے والے AICTE نے پاکستان کے تعلیمی اداروں کو لے کر وارننگ جاری کی ہے۔ ہندوستانی طلبا کے لئے جاری کئے گئے اس مشترکہ مشاورت میں کہا گیا ہے کہ ہندوستانی طلبا پاکستان کے کسی بھی کالج یا تعلیمی ادارے میں داخلہ نہ لیں۔ یو جی سی کے مطابق، پاکستان سے پڑھ کر آنے والے طلبا ہندوستان میں نوکری اور اعلیٰ تعلیم حاصل کرنے کے اہل نہیں ہوں گے۔

      یوجی سی اور اے آئی سی ٹی ای نے کہا ہے کہ ہندوستانی طلبا اعلیٰ تعلیم کے لئے پاکستان نہ جائیں۔ پاکستان جاکر تکنیکی، تعلیم اور اعلیٰ تعلیم یا دیگر کسی بھی طرح کا کورس کرنے والا ہندوستانی طالب علم ہندوستان میں نوکری اور آگے کی پڑھائی کے لئے اعلیٰ تعلیمی اداروں میں داخلہ نہیں لے سکے گا۔

      یوجی سی نے یہ واضح کیا ہے کہ ایسے شخص جو پاکستان سے آئے ہیں، ان ر یہ ضابطہ نافذ نہیں ہوگا۔ پاکستان سے آئے مہاجر اور ان کے بچے جنہیں ہندوستان کے ذریعہ شہریت فراہم کی گئی ہے، وہ وزارت داخلہ کی منظوری کے بعد ہندوستان میں روزگار پانے کے اہل ہوں گے۔ واضح رہے کہ اس سے قبل یوجی سی اور اے آئی سی ٹی ای ہندوستانی طلبا کے لئے چین کے تعلیمی اداروں کے ضمن میں بھی اسی طرح کی ایڈوائزری جاری کی تھی۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      جموں وکشمیر دہشت گردانہ حملہ: دہشت گردوں نے’شفٹ‘ بدلنے کے وقت چوکی پرCISF جوانوں کو بنایا نشانہ

      واضح رہے کہ ہر سال جموں وکشمیر کے کئی طالب علم پاکستان کے انجیئرنگ کالجوں میں داخلہ لے رہے ہیں۔ ابھی تک سینکڑوں کشمیری طلبا پاکستان کے تکنیکی کالجوں میں داخلہ لے چکے ہیں۔

      اے آئی سی ٹی ای کا کہنا ہے کہ غیر منظور شدہ اداروں میں تعلیم حاصل کرنے کے بعد حاصل کی گئی ڈگری ہندوستانی اداروں کی ڈگری کے برابر نہیں ہوتی۔ اس طرح کی غیر منظوری والے اداروں کی ڈگری حاصل کرنے کے لئے بھاری مقدار میں رقم خرچ کرنے کے علاوہ بھی ایسے طلبا کو ہندوستان میں نوکری کے مواقع حاصل کرنے میں پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ اسی موضوع پر نوٹس لیا گیا ہے۔ ایسے طلبا کے والدین کا ان پر پڑنے والے مالی بوجھ سے بچنے کے لئے گائڈ لائن جاری کئے گئے ہیں۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: