உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Boris Johnson in Trouble:ندیم ذہاوی کو برٹین کا نیا فائنانس منسٹر کیا گیا مقرر، اسٹیو بارکلے نے سنبھالا وزیر صحت کا عہدہ

    برطانوی وزیراعظم بوریس جانسن کے ان دو وزرا نے چھوڑا ان کا ساتھ۔ UK میں سیاسی بحران!

    برطانوی وزیراعظم بوریس جانسن کے ان دو وزرا نے چھوڑا ان کا ساتھ۔ UK میں سیاسی بحران!

    Boris Johnson in Trouble: ساجد جاوید نے جانسن کو لکھے اپنے خط میں کہا ہے، مجھے کہتے ہوئے دُکھ ہورہا ہے کہ آپ کی قیادت میں تبدیلی کا کوئی امکان نظر نہیں آتا ہے۔ اس لئے آپ نے میرا بھروسہ کھو دیا ہے۔

    • Share this:
      لندن:Boris Johnson in Trouble: برطانوی سیاست میں ایک نیا ہنگامہ برپا ہوگی اہے۔ برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن نے منگل کو رشی سنک کی جگہ ندیم زہاوی کو وزیر خزانہ مقرر کیا ہے۔ 55 سالہ زہاوی کو ایک ایسی معیشت وراثت میں ملی ہے جو ممکنہ طور پر شدید مندی یا مندی کی طرف بڑھ رہی ہے۔ زہاوی پہلے وزیر تعلیم تھے۔ ان کی جگہ مشیل ڈونیلن کو وزیر تعلیم مقرر کیا گیا ہے۔ اسٹیو بارکلے کو صحت اور سماجی نگہداشت کا وزیر مقرر کیا گیا ہے۔ اس سے قبل اسٹیو بارکلے بورس جانسن کے چیف آف اسٹاف کے طور پر کام کر رہے تھے۔

      سُنک اور زہاوی نے دیا وزارتی عہدوں سے استعفیٰ
      اس سے قبل وزیر خزانہ رشی سنک اور وزیر صحت ساجد جاوید نے منگل کو اپنے عہدوں سے استعفیٰ دے دیا تھا۔ انہوں نے وزیر اعظم بورس جانسن کی قیادت کا حوالہ دیتے ہوئے استعفیٰ دیا۔ بورس جانسن نے اپنے ایک وزیر کے خلاف جنسی بدتمیزی کی شکایت کے تازہ ترین معاملے پر معافی مانگنے کی کوشش کی تھی۔ ان دونوں کے اس اقدام نے پی ایم جانسن کی مشکلات میں اضافہ کردیا ہے جو پہلے ہی بحران میں گھرے ہوئے ہیں۔

      ساجد جاوید کا پی ایم جانسن پر نشانہ
      ساجد جاوید نے کہا کہ انہیں اسکینڈلز کے ایک سلسلہ کے بعد جانسن کی قومی مفاد میں حکومت کرنے کی صلاحیت پر اعتماد ختم ہو گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اب وہ اچھے ضمیر سے کام نہیں کر سکتے۔ انہوں نے کہا کہ بہت سے قانون سازوں اور عوام نے جانسن کی قومی مفاد میں حکومت کرنے کی صلاحیت پر اعتماد کھو دیا ہے۔

      ساجد جاوید نے جانسن کو لکھے اپنے خط میں کہا ہے، مجھے کہتے ہوئے دُکھ ہورہا ہے کہ آپ کی قیادت میں تبدیلی کا کوئی امکان نظر نہیں آتا ہے۔ اس لئے آپ نے میرا بھروسہ کھو دیا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Highland Park Shooting:امریکہ میں یوم آزادی پریڈ کے دوران فائرنگ، 6ہلاک57زخمی

      یہ بھی پڑھیں:
      Pak وزیر کا بیان، ڈرگ ایڈکٹ ہیں عمران خان، کوکین کے بغیر دو گھنٹے بھی نہیں رہ سکتے

      سنک نے کہا-حکومت چھوڑنے کا دُکھ، لیکن ایسے آگے نہیں بڑھ سکتے
      اسی وقت، سنک نے کہا - عوام کو توقع ہے کہ حکومت صحیح اور سنجیدگی سے کام کرے گی۔ ہمارے نقطہ نظر بنیادی طور پر بہت مختلف ہیں۔ میں اتفاق کرتا ہوں کہ یہ میری آخری وزارتی عہدے کی نوکری ہو سکتی ہے، لیکن مجھے یقین ہے کہ یہ ایسے مسائل ہیں جن کے لیے لڑنا ضروری ہے اور اسی لیے میں استعفیٰ دے رہا ہوں۔ مجھے حکومت چھوڑنے کا افسوس ہے لیکن میں نہ چاہتے ہوئے اس نتیجے پر پہنچا ہوں کہ ہم اس طرح سے آگے نہیں بڑھ سکتے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: