உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    یوکرین نے دئیے سمجھوتے کے اشارے! زیلنسکی نے کہا-NATO میں نہیں ہونا چاہتے ہیں شامل، بات چیت کے لئے تیار، لیکن...

    Ukraine-Russia War: حالیہ برسوں میں، نیٹو نے کریملن کو سابق سوویت بلاک کے ممالک کو شامل کرنے اور اسے وسعت دینے کے لیے اکسایا ہے۔ روس نیٹو کی توسیع کو خطرے کے طور پر دیکھتا ہے۔

    Ukraine-Russia War: حالیہ برسوں میں، نیٹو نے کریملن کو سابق سوویت بلاک کے ممالک کو شامل کرنے اور اسے وسعت دینے کے لیے اکسایا ہے۔ روس نیٹو کی توسیع کو خطرے کے طور پر دیکھتا ہے۔

    Ukraine-Russia War: حالیہ برسوں میں، نیٹو نے کریملن کو سابق سوویت بلاک کے ممالک کو شامل کرنے اور اسے وسعت دینے کے لیے اکسایا ہے۔ روس نیٹو کی توسیع کو خطرے کے طور پر دیکھتا ہے۔

    • Share this:
      کیف: نیٹو کی رکنیت پر یوکرین اور روس کے درمیان جنگ (Ukraine-Russia War)چھڑ گئی تھی لیکن اب یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی(Volodymyr Zelensky) نے کہا ہے کہ وہ نیٹو کی رکنیت کے لیے زیادہ زور نہیں دے رہے۔ زیلنسکی نے کہا کہ وہ دو الگ الگ روس نواز خطوں کی حیثیت پر سمجھوتہ کرنے کے لیے تیار ہیں، جسے صدر ولادیمیر پوتن(Vladimir Putin) نے 24 فروری کو حملہ شروع کرنے سے ٹھیک پہلے آزاد علاقے کے طو رپر تسلیم کیا تھا۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Russia Ukraine War:یوکرین کے صدر کے گھر کے باہر گرا راکٹ، زیلنسکی نے کہا- خطا ہوگیا نشانہ

      ولادیمیر زیلنسکی نے پیر کو اے بی سی نیوز پر نشر ہونے والے ایک انٹرویو میں کہا کہ جب ہم سمجھ گئے کہ نیٹو یوکرین کو قبول کرنے کے لیے تیار نہیں ہے، تو میں اس سوال کو لے کر کافی پہلے خاموش ہو گیا۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ یہ اتحاد متنازع مسائل اور روس کے ساتھ محاذ آرائی سے خوفزدہ ہے۔

      نیٹو کے مدعے پر ناراض تھا روس
      روس صرف نیٹو کے معاملے پر یوکرین سے ناراض تھا۔ روس نے کہا ہے کہ وہ نہیں چاہتا کہ یوکرین نیٹو میں شامل ہو۔ نارتھ اٹلانٹک ٹریٹی آرگنائزیشن سرد جنگ کے آغاز میں یورپ کو سوویت یونین سے بچانے کے لیے تشکیل دی گئی تھی۔

      حالیہ برسوں میں، نیٹو نے کریملن کو سابق سوویت بلاک کے ممالک کو شامل کرنے اور اسے وسعت دینے کے لیے اکسایا ہے۔ روس نیٹو کی توسیع کو خطرے کے طور پر دیکھتا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Russia-Ukraine War:یوکرین نے موساد کو دی پوتن کے قتل کا کانٹریکٹ، ہوا سنسنی خیز انکشاف

      روسی صدر ولادیمیر پوتن چاہتے ہیں کہ یوکرین کو ایک خودمختار ملک کے طور پر دیکھا جائے۔ جب اے بی سی نیوز نے ان سے روس کے مطالبے کے بارے میں پوچھا تو زیلنسکی نے کہا کہ وہ بات چیت کے لیے تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میں سیکیورٹی کی ضمانت کی بات کر رہا ہوں۔

       
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: