اقوام متحدہ نےدونوں فریق سے کی امن کی اپیل، دہشت گردی ختم ہونے تک کوئی بات چیت نہیں

اکبرالدین نے واضح طورپرکہا کہ جب تک دہشت گردی پرلگام نہیں لگےگا، پاکستان سے کسی بھی طرح کی امن مذاکرات یا بات چیت کی کوئی گنجائش نہیں ہے۔

Aug 16, 2019 10:17 PM IST | Updated on: Aug 16, 2019 10:24 PM IST
اقوام متحدہ نےدونوں فریق سے کی امن کی اپیل، دہشت گردی ختم ہونے تک کوئی بات چیت نہیں

جموں وکشمیرسے دفعہ 370 ہٹائے جانے سے متعلق منعقدہ یواین ایس سی میں چل رہی میٹنگ ختم ہوگئی ہے۔

جموں وکشمیرسے دفعہ 370 ہٹائے جانے کولےکراقوام متحدہ سلامتی کونسل میں چل رہی میٹنگ ختم ہوگئی ہے۔ میٹنگ میں اراکین ممالک نےدونوں قوموں سےامن وامان بنائے رکھنےکےلئےکہا اورایسے کسی بھی ایکشن سے بچنے کے لئےکہا ہےکہ جس سےعلاقے میں کشیدگی پیدا ہو۔

اس موضوع پراقوام متحدہ میں ہندوستان کےسفیراکبرالدین نےکہا کہ کشمیراورآرٹیکل 370 ہٹایا جانا ہندوستان کا داخلی معاملہ ہے۔ صرف ہندوستان ہی طےکرسکتا ہے کہ وہ داخلی مسئلےکوکیسے حل کرے گا۔ انہوں نےکہا کہ جہاں تک کشمیرمیں کشیدگی کا سوال ہے ہندوستان نےاس پربہترین کام کیا ہےاورپیرسےریاست میں سبھی اسکول کالج کھل جائیں گے۔ کچھ لوگ کشمیرمیں بدامنی پھیلانا چاہتے ہیں، لیکن ہندوستان امن اورخوشحالی کے راستے پرجموں وکشمیرکوآگے لے جائے گا۔

Loading...

اکبرالدین نےکہا کہ کچھ لوگ جہاد کےنام پرکشمیرمیں دہشت گردی اورتشدد پھیلانا چاہتے ہیں، لیکن ہم ایسا نہیں ہونےدے سکتے۔ کشمیردوطرفہ معاملہ ہےاورہم پاکستان کے ساتھ امن مذاکرات کے لئے ہمیشہ تیاررہےہیں۔ حالانکہ دہشت گردی اس میں ہمیشہ سے رکاوٹ رہی ہے۔ اکبرالدین نے واضح  طورپرکہا کہ جب تک دہشت گردی پرلگام نہیں لگےگا، کسی بھی طرح کی امن مذاکرات یا بات چیت کی کوئی گنجائش نہیں ہے۔ انہوں نےکہا کہ ہم ابھی بھی شملہ معاہدے پرقائم ہیں، لیکن پاکستان کوپہلے ہندوستان کےخلاف دہشت گردی کوحمایت کرنےکی پالیسی کوتبدیل کرنی ہوگی۔

Loading...