ہوم » نیوز » عالمی منظر

روس سے دفاعی سودا کرنے پر ہندوستان سے ابھی بھی ناراض ہے امریکہ، کر سکتا ہے بڑی کارروائی

ہندوستان نے امریکی انتباہ کے باوجود اکتوبر 2018 میں ایس 400۔ حفاظتی میزائل سسٹم کی پانچ اکائیاں خریدنے کے لئے روس کے ساتھ پانچ ارب ڈالر کے سودے پر دستخط کئے تھے۔

  • Share this:
روس سے دفاعی سودا کرنے پر ہندوستان سے ابھی بھی ناراض ہے امریکہ، کر سکتا ہے بڑی کارروائی
امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کا بڑا فیصلہ، چین سے آنے والی سبھی پروازیں معطل کیں

واشنگٹن۔ روس سے کئی ارب ڈالر کی ایس۔ 400 میزائل سسٹم خریدنے کو لے کر ہندوستان سے چل رہی امریکہ کی ناراضگی ابھی ختم نہیں ہوئی ہے۔ امریکہ کے ایک اعلیٰ سفارت کار نے کہا ہے کہ ہندوستان پر امریکی پابندیوں کا خدشہ ابھی بھی برقرار ہے۔ ساتھ ہی انہوں نے زور دے کر کہا کہ ہندوستان کو ٹیکنالوجیز اور پلیٹ فارموں کے لئے پالیسی ساز عبد بستگی دینی ہو گی۔


ہندوستان نے امریکی انتباہ کے باوجود اکتوبر 2018 میں ایس 400۔ حفاظتی میزائل سسٹم کی پانچ اکائیاں خریدنے کے لئے روس کے ساتھ پانچ ارب ڈالر کے سودے پر دستخط کئے تھے۔ امریکہ نے انتباہ دیا تھا کہ اگر ہندوستان اس سودے پر آگے بڑھے گا تو اسے ’ کاونٹرنگ امیریکاز ایڈورسریز تھرو سیکشنس ایکٹ ( سی اے اے ٹی اے ایس) کے تحت امریکی پابندیوں کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ ہندوستان نے میزائل سسٹم کے لئے پچھلے سال روس کو تقریبا  80 کروڑ ڈالر کی پہلی ادائیگی کی تھی۔


ایس۔ 400 لمبی دوری کی سطح سے ہوا میں مار کرنے والی روس کی سب سے جدید میزائل دفاعی سسٹم ہے۔ جنوبی اور وسطی ایشیا معاملوں کی ذمہ داری سنبھال رہیں رخصت پذیر پرنسپل ڈپٹی اسسٹنٹ وزیر خارجہ ایلیس ویلس نے واشنگٹن ڈی سی واقع ایک تھنک ٹینک سے بدھ کے روز کہا ’’ سی اے اے ٹی ایس اے پارلیمنٹ کے لئے ایک پالیسی ترجیح بنی ہوئی ہے جہاں اسے نافذ کرنے کی اپنی مضبوط مانگ اور فوجی فروخت سے روس کو ہونے والے اقتصادی فائدے کو لے کر تشویش دیکھی ہے کہ وہ اس کا استعمال پڑوسی ملکوں کی خود مختاری کو اور بھی کم تر کرنے کے لئے کر سکتا ہے‘‘۔


سی اے اے ٹی ایس ایک سخت قانون ہے اور اس کے تحت امریکہ نے روس پر پابندیاں لگا رکھی ہیں۔ اس قانون کے تحت ان ملکوں کے خلاف کارروائی بھی کی جا سکتی ہے جو روس سے دفاعی سامان خریدتے ہیں۔
First published: May 21, 2020 03:32 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading