ہوم » نیوز » عالمی منظر

شی جن پنگ سے بات چیت ناکام ہونےپر چین پر لگےگا نیا ٹیکس : ٹرمپ

امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے کہا کہ اس ہفتے ارجینٹینامیں چین کے صدر شی جن پنگ کے ساتھ کوئی معاہدہ نہ ہوپانے کی صورت میں چین پر 267ارب ڈالر کا اضافی درآمدات ٹیکس لگایا جائےگا۔

  • UNI
  • Last Updated: Nov 27, 2018 01:36 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
شی جن پنگ سے بات چیت ناکام ہونےپر چین پر لگےگا نیا ٹیکس : ٹرمپ
امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ: فائل فوٹو

امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے کہا کہ اس ہفتے ارجینٹینامیں چین کے صدر شی جن پنگ کے ساتھ کوئی معاہدہ نہ ہوپانے کی صورت میں چین پر 267ارب ڈالر کا اضافی درآمدات ٹیکس لگایا جائےگا۔  ٹرمپ نے ایک انٹرویو میں اس ضمن میں وارننگ دی ہے۔اس سے پہلے ٹرمپ نے نامہ نگاروں سے کہا تھا کہ اگر چین امریکہ کے ساتھ نرم رویہ اختیار کرتاہے تو وہ آئندہ جی 20چوٹی کانفرنس سے الگ جن پنگ کے ساتھ تجارتی معاہدے پربات چیت کرسکتے ہیں۔یہ کانفرنس 30نومبر اور یکم دسمبر کو ارجینٹیناکے بیونس آیرس میں منعقد کی جارہی ہے۔


پیرکو ٹرمپ نے ’وال اسٹریٹ‘ جرنل کےساتھ اپنے ایک انٹرویو میں کہا،’’چین کے ساتھ سودا تبھی ممکن ہوگا جب وہ امریکہ کے ساتھ مقابلے کےلئے آگے آئے گا۔اگر ہم کوئی سودا نہیں کرتے تو میں 267ارب ڈالر کا اضافی ٹیکس لگادوں گا۔‘‘


ڈونالڈ ٹرمپ نے کہا کہ نئے ٹیرف 10سے 25فیصد کی شرح سے ہوں گے اور چین سے درآمدات کئے گئے آئی فون اور لیپ ٹاپ جیسے مصنوعات پر اضافی ٹیکس لگائے جاسکتے ہیں۔


ٹرمپ کے مارچ میں اسٹیل اور ایلیومینیم پر نئے درآمدات ٹیکس لگانے کے اعلان کے بعد چین اور امریکہ تجارت سے متعلق شدید تنازعہ میں الجھ گئے۔دونوں ملکوں کے درمیان مئی میں تنازعہ اور بڑھ گیا جب ٹرمپ انتظامیہ نے اعلان کیا کہ 50ارب ڈالر کے چینی سازوسامان پر 25فیصد ٹیکس لگایا جائےگا جس کے بدلے میں چین نے امریکی سازوسامان پر اتنی رقم کا ٹیکس لگادیا۔تب سےاب تک ٹرمپ انتظامیہ نے چینی سازوسامان پر 250ارب ڈالر کے ٹیکس لگائے ہیں،جس سےاس نے چین کو بھی بدلے کی کارروائی کرنے پر مجبور کیا۔
First published: Nov 27, 2018 01:36 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading