உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    US dares China again: سخت کشیدگی کے درمیان امریکی کانگریس کے ایک اور وفد کادورہ تائیوان

    بیجنگ تائیوان کو اپنا مانتا  ہے

    بیجنگ تائیوان کو اپنا مانتا ہے

    اگرچہ واشنگٹن میں یہ بات ہے کہ پیلوسی نے تائیوان کا دورہ کرتے ہوئے بائیڈن انتظامیہ کی نفی کی، چین کو شبہ ہے کہ وائٹ ہاؤس جان بوجھ کر خطے میں تناؤ کو ہوا دے رہا ہے-

    • Share this:
      امریکی ایوان نمائندگان کی اسپیکر نینسی پیلوسی (Nancy Pelosi) کے صرف 12 دن قبل تائی پے (Taipei) کے دورے کے بعد بیجنگ اور واشنگٹن کے درمیان بڑھتی ہوئی کشیدگی میں اضـافہ ہورہا ہے۔ امریکی قانون سازوں کا ایک وفد اتوار کو دو روزہ دورے پر تائیوان پہنچا۔ میساچوسٹس کے سینیٹر ایڈ مارکی کی قیادت میں ٹیم کی تائیوان کے صدر سائی انگ وین (Tsai Ing-wen) اور وزیر خارجہ جوزف وو(Joseph Wu) سے ملاقات متوقع ہے۔

      تائیوان کی وزارت خارجہ نے وفد کا پرتپاک خیرمقدم کرتے ہوئے کہا کہ وہ تائیوان کی پارلیمنٹ کی خارجہ امور اور قومی دفاعی کمیٹی کے ساتھ سلامتی اور تجارتی امور پر بات چیت کرے گا اور بڑھتی ہوئی کشیدگی کے تناظر میں امریکہ کی تائیوان کے تئیں مضبوط حمایت کا مظاہرہ کرنے پر اس کا شکریہ ادا کرتا ہے۔

      بیان میں مزید کہا گیا کہ وفد میں ڈیموکریٹک نمائندے جان گارامنڈی، ایلن لوونتھل اور ڈان بیئر اور ریپبلکن ریپبلکن اوموا اماتا کولمین رادیوگن بھی شامل ہیں۔

      اگرچہ امریکی قانون سازوں کی ٹیمیں چین کی طرف سے زیادہ عوامی ناراضگی کو راغب کیے بغیر اس سے پہلے تائیوان کا دورہ کر چکی ہیں، پیلوسی کے ہائی پروفائل سفر نے بیجنگ کی طرف سے ایک بیلسٹک ردعمل کو جنم دیا، جس کی آزادی کو سمجھنا مشکل ہے کہ امریکی کانگریس اکثر ایگزیکٹو سے مشق کرتی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں :

      Har Ghar Tiranga: وادی کشمیر میں سرگرم دہشت گردوں کے گھروں پر بھی ترنگا!

      Shah Rukh: شاہ رخ خان کے بیٹے ابرام نے لہرایاجھنڈا، فخر، محبت اور خوشی کا کیااظہار

      یہ بھی پڑھیں:

      Police Medals: یوم آزادی کےموقع پرجموں کشمیرپولیس ملااعزاز،نمایاں خدمات کےلیےملے125تمغے

      اگرچہ واشنگٹن میں یہ بات ہے کہ پیلوسی نے تائیوان کا دورہ کرتے ہوئے بائیڈن انتظامیہ کی نفی کی، چین کو شبہ ہے کہ وائٹ ہاؤس جان بوجھ کر خطے میں تناؤ کو ہوا دے رہا ہے، یہاں تک کہ کچھ امریکی تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ بیجنگ کے بڑھتے ہوئے جارحیت کی وجہ سے یہ مسئلہ پاؤڈر کیگ بن گیا ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: